سپریم کورٹ ،قتل کا ایک ملزم بری ،دوسرے کی عمر قید کی سزا برقرار

جمعرات مئی 17:25

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) سپریم کورٹ نے راولپنڈی کے علاقے صادق آباد میں نوجوان کوقتل کرنے والے دو ملزموں کی سزاؤں کے خلاف اپیلیں نمٹاتے ہوئے ایک ملزم کوبری جبکہ دوسرے کی عمر قید کی سزا برقرار رکھی ہے۔جمعرات کے روز قائم مقام چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے ملزمان ظفراللہ جان اور آصف بٹ کی جانب سے دائر اپیلوں کی سماعت کی۔

(جاری ہے)

ملزموں نے 28اکتوبر2010کوطالب علم فراز عباس کوملزم ظفراللہ جان کے گھر میں فائر کرکے قتل کرنے کے بعد لاش کے ٹکڑے کردیئے تھے دونوں ملزموں کو ٹرائل کورٹ نے سزائے موت اور جرمانے کی سزا سنائی تھی جسے ہائیکورٹ نے عمر قید میں تبدیل کردیا تھا سپریم کورٹ نے حقائق کا جائزہ لینے کے بعد مرکزی ملزم ظفراللہ جان کی عمر قید کی سزا برقرار رکھی جبکہ شریک ملزم کے خلاف شواہد کی عدم دستیابی اور شک کا فائدہ دیکر ملزم آصف بٹ کو بری کرندیا۔