رمضان کریم رحمت کا مہینہ ہے مگر حکمرانوں کی پالیسیاں زحمت بنارہی ہیں ،سربراہ پاکستان سنی تحریک

پھل فروٹ کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ روکنے اور ذخیرہ اندوزی کے خلا ف کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ،ثروت اعجاز قادری

جمعرات مئی 19:00

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ رمضان کریم رحمت کا مہینہ ہے مگر حکمرانوں کی پالیسیاں زحمت بنارہی ہیں ،،کے الیکٹرک کا غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ پر قابو نا پانا سوالیہ نشان ہے ،پھل فروٹ کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ روکنے اور ذخیرہ اندوزی کے خلا ف کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ،عوام کی خدمت عبادت کر ناعین عبادت ہے ،رمضان کریم ہمیں برداشت ،حقوق العباد ادا کرنے غریبوں کوخوشیوں میں شامل کرنے کا درس دیتا ہے ،،پاکستان سنی تحریک کے فلاحی ادارے اہلسنت خدمت فائونڈیشن کے تحت مستحقین میں ہر سال کی طرح امسال بھی راشن تقسیم کیا جائیگا ،مخیر حضرات اور عوام سے اپیل ہے کہ وہاپنی زکواة ،فطرہ وعطیات اہلسنت خدمت فائونڈیشن کو دیں،بزدل دہشتگرد آخری ہچکیاں لے رہے ہیں ،،بلوچستان میں آپریشن کے دوران کرنل سہیل عابد کی شہادت پرپوری قوم افسردہ ہے ،،کراچی سمیت ملک بھر میں امن وامان قائم رکھنے میں پاک فوج کا خون شامل ہے ،دہشتگردی کے خلاف پاک فوج کا کردار مثالی ہے پوری قوم پاک فوج کی قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے ،نو شہرہ میں فورسز کی گاڑی پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہیں ،،رمضان المبارک تو امن وسلامتی اور انسانیت کے دکھ سکھ میں کام آنے کا درس دیتا ہے ،دہشتگرد اسلام وملک دشمن ہیں ان سے انہی کی زبان میں نمٹنا ہوگا ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیو کراچی میںالغوثیہ ویلفیئرکے چیئر مین حسین رومی کے والد کے سوئم کی تقریب میں شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ،ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ قرآن پاک مکمل ضابطہ حیات ہے ،قرآن وسنت کے نظام کو نافذکرکے کرپشن ،دہشتگردی کو ختم فوری انصاف کو یقینی بنایا جاسکتا ہے، دینی ودنیاوی جدید تعلیم سے بچوں کو آراستہ کرنا والدین اور حکومت کا مذہبی وقومی فرض ہے ،،پاکستان کی ترقی وخوشحالی کیلئے نیوجنریشن کو حکومتی سطح پردورعصر کی جدید تعلیمات کیلئے مواقع فراہم کئے جائیں ،دین اسلام امن ومحبت بھائی چارگی اور احترام انسانیت کا درس دیتا ہے ،انتہاپسندی کے خاتمے اور ملک کے استحکام کیلئے یکجا ہوکر جدوجہد کرنا ہوگی ، پاکستان کو اسلامی وفلاحی ریاست بنانے کیلئے علماء کرام کو آگے آکر جدوجہد کرنا ہوگی۔