حکمران جماعت میں پھوٹ پڑ گئی،شہباز شریف ملکی سلامتی کے دشمن اپنے بھائی کا بیانیہ تبدیل نہیں کرا سکیں گے : مخدوم خسرو بختیار

جمعرات مئی 20:46

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما مخدوم خسرو بختیار نے کہا ہے کہ نواز شریف کی ملک دشمن پالیسیوں کے با عث حکمران جماعت میں پھوٹ پڑ گئی ہے اب اسے ٹو ٹنے سے کوئی نہیں بچا سکتا ۔ کوئی محب وطن ان کا ساتھ نہیں دے گا ۔نا اہل نوازشریف نے ملک کو انتہائی خطر ناک صورتحال میں دھکیل دیا ہے اوراپنی کرپشن چھپانے کے لئے ملکی سالمیت دائو پر لگا دی ہے۔

رحیم یار خان میںپارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم نے بھی ن لیگ کی ملک دشمنی پر مبنی اور عوامی مفاد کے خلاف پالیسیوں کے باعث ہی علیحدگی اختیار کی تھی ۔ آج ن لیگی ارکان پارلیمنٹ کا یہ مطالبہ کہ نوازشریف اپنا بیانیہ واپس لیں اور ایسا نہ ہونے کی صورت میں ان کی طرف سے پارٹی چھوڑنے کی دھمکی ہمارے موقف کی تائید ہے ۔

(جاری ہے)

خسرو بختیار نے کہا کہ کسی کو اس غلط فہمی میں مبتلا نہیں رہناچاہیے کہ شہباز شریف اپنے بڑے بھائی سے تعلقات خراب کریں گے وہ بھائی کا بھی ساتھ دیں گے اور ان کا بیانیہ کبھی تبدیل نہیں کرواسکیں گے ۔

ملکی سلامتی کے دشمن نوازشریف کے ساتھی اب ان کا اصل چہرہ پہچان چکے ہیں اور وہ جلد ہی ان کا ساتھ چھوڑ جائیں گے ۔ دونوں بھائیوں کے ساتھ محض ان کے صرف چند درباری ہی رہ جائیں گے ۔ خسرو بختیار نے کہا کہ ن لیگی ارکان اسمبلی کی طرف سے چوہدری نثار کی واپسی کا مطالبہ پارٹی میں بغاوت کے مترادف ہے ۔ انہوں نے پنجاب اسمبلی میں ن لیگ رکن کی طرف سے تحریک انصاف قیادت سے متعلق انتہائی نا مناسب ریمارکس پر سخت تنقید کی اور کہا کہ یہ لوگ پارٹی میں ٹوٹ پھوٹ اور سامنے نظر آتی انتخابی شکست پر حواس باختہ ہو گئے ہیں اور رمضان المبارک کے تقدس تک کو بھول گئے ہیں ۔