قومی سلامتی کمیٹی کی طرف سے نواز شریف کے بیان کو غلط گمراہ کن اور قابل مذمت قرار دینے کے باوجود نواز شریف کا اپنے بیان پر اصرار غداری کے زمرہ میں آتا ہے،ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر

جمعرات مئی 21:20

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) جمعیت علماء پاکستان((نورانی) ملی یکجہتی کونسل اور نظام مصطفیٰ محاذ کے صدر ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیر نے کہا ہے کہ قومی سلامتی کمیٹی کی طرف سے نواز شریف کے بیان کو غلط گمراہ کن اور قابل مذمت قرار دینے کے باوجود نواز شریف کا اپنے بیان پر اصرار ملک سے کھلی غداری کے زمرہ میں آتا ہے ملک بھر کی تمام مذہبی اور سیاسی جماعتیں اور تمام محب وطن شخصیات ان کے بیان کی مذمتیں کررہے ہیںصوبائی اسمبلیوں میں اس کے خلاف قرار دادیں منظور ہورہی ہیں اور اس بیان کو ملکی سلامتی اور خود مختاری پر کاری ضرب قرار دیا جارہا ہے حتیٰ کے خود مسلم لیگ کے اہم رہنما چودھری نثار اس کو غصہ اور تصادم سے تعبیر کر کے پارٹی کیلئے انتہائی تشویشناک صورتحال قرار دے رہے ہیں لیکن متحدہ مجلس عمل انکے بیان کو سنجیدگی کے ساتھ لینے کے مشورہ دیکر ملک سے وفاداری کے بجائے نواز شریف سے اپنی وفاداری نبھا رہی ہے ایم ایم اے کے اس بیان سے جمعیت علماء پاکستان کے اس موقف کی تصدیق ہوگئی ہے کہ متحدہ مجلس عمل نواز شریف کی بی ٹیم ہے جس میں مسلم لیگ کی حلیف جماعتیں اکھٹی ہو کر نواز شریف کی حمایت کرینگی اور ان کے ایجنڈے کو پائیہ تکمیل تک پہنچائیں گی۔