سہانے مستقبل کا خواب موت کی وادی میں لے گیا

غیر قانونی طور پر یورپ جانے والے 23پاکستانیوں کی ہلاکت کا انکشاف

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس جمعرات مئی 22:49

سہانے مستقبل کا خواب موت کی وادی میں لے گیا
گجرات(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار- 17مئی 2018ء ) :سہانے مستقبل کا خواب موت کی وادی میں لے گیا۔ غیر قانونی طور پر یورپ جانے والے 23پاکستانیوں کی ہلاکت کا انکشاف ہوا ہے۔تفصیلات کے مطابق اچھے طرز زندگی کی خواہش ایک ایسی آرزو ہوتی ہے جو انسان کو انتہائی قدم اٹھانے پر بھی مجبور کر دیتی ہے۔۔پاکستان میں بڑھتی ہوئی بے روزگاری اور بیرون ملک جا کر پیسہ کمانے کی خواہش بہت سے نوجوانوں کو کچھ ایسے اقدامات اٹھانے پر مجبور کر دیتی ہے جو ان کے لیے تو بدترین ثابت ہوتے ہی ہیں لیکن ان کے گھر والے اور انکے پیارے زندگی بھر کے لیے انکی راہ تکتے رہ جاتے ہیں ۔

ایسا ہی ایک واقعہ حال میں پیش آیاہے۔سہانے مستقبل کا خواب موت کی وادی میں لے گیا۔ غیر قانونی طور پر یورپ جانے والے 23پاکستانیوں کی ہلاکت کا انکشاف ہوا ہے۔

(جاری ہے)

غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی خواہش وبال جان بن گئی۔ایسے ہی غیر قانونی طور پر یورپ جانے والے شہران شاہ نے اپنی کہانی میڈیا پر عوام کے سامنے رکھ دی ۔شہران شاہ کا کہنا تھا کہ پھالیہ کا سمگلر پٹھانے خان انسانی سمگلنگ کے مکروہ دھندے میں ملوث ہے۔

اس نے ہمیں مارا پیٹا اور ہمارے ساتھ کافی زیادتی کی۔شہران شاہ کا کہنا تھا کہ یہاں سے ہم بذریعہ ایران ترکی کے بارڈر پر پہنچے تو وہاں پٹھانے خان نے ایجنٹس کے ذریعے نوجوانوں کو بارڈر کراس کروانا چاہا تو سیکیورٹی فورسز فورسز نے فائرنگ کر دی۔ وہاں 20 سے 25لوگوں کی موت واقع ہو گئی۔اسکا مزید کہنا تھا کہ میری ٹانگ میں بھی گولی لگی۔تاہم میں زندہ بچ کر پاکستان آ گیا ۔شہران شاہ نے اپیل کی کہ کبھی بھی انسانی سمگلروں کے ہتھے نہ چڑھیں۔وہاں 20 سے 25لوگوں کی موت واقع ہو گئی۔اسکا مزید کہنا تھا کہ میری ٹانگ میں بھی گولی لگی۔تاہم میں زندہ بچ کر پاکستان آ گیا ۔شہران شاہ نے اپیل کی کہ کبھی بھی انسانی سمگلروں کے ہتھے نہ چڑھیں۔