ملک میں ٹیبل ٹینس کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں بلکہ کھلاڑیوں کو زیادہ سے زیادہ انٹرنیشنل ٹورنامنٹس میں بھیجنے کی ضرورت ہے، خواجہ حسن ودود

جمعہ مئی 14:24

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) پاکستان ٹیبل ٹنیس فیڈریشن کے صدر خواجہ حسن ودود نے کہا ہے کہ ملک میں ٹیبل ٹینس کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں بلکہ کھلاڑیوں کو زیادہ سے زیادہ انٹرنیشنل ٹورنامنٹس میں بھیجنے کی ضرورت ہے، گذشتہ روز اے پی پی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں ٹیبل ٹینس کا کھیل سکول، کالجز اور یونیورسٹی کی سطح پر باقاعدگی کے ساتھ کھیلا جا رہا ہے اور تعلیمی ادارے ٹیبل ٹینس کے ٹورنامنٹس کے سالانہ مقابلوںکا انعقاد بھی کرواتی ہے جس میں طلباء و طالبات حصہ لیتے ہیں، انہوں نے کہا کہ ملک میں ٹیبل ٹینس کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں بلکہ کھلاڑیوں کو زیادہ سے زیادہ انٹرنیشنل ٹورنامنٹس میں بھیجنے کی ضرورت ہے تاکہ ان کھلاڑیوں کو انٹرنیشنل مقابلوں میں شرکت کا تحربہ ہوسکے، خواجہ حسن نے کہا کہ قومی جونیئر ٹیبل ٹینس چیمپئن شپ اور ٹیبل ٹینس سپرلیگ کے کامیاب انعقاد کے بعد اب پاکستان ٹیبل ٹینس فیڈریشن عیدالفطر کے بعد ماسٹر ٹیبل ٹینس ٹورنامنٹ منعقد کروانے کا منصوبہ بنارہی ہے، جس میں ملک بھر سے دس ٹیموں کے 32 مرد اور 16 خواتین کھلاڑی حصہ لیں گے،ان ٹیموں میں پنجاب،، سندھ،، بلوچستان،، خیبرپختونخوا،، پاکستان واپڈا،، پاکستان آرمی، ہائرایجوکیشن کمیشن، نیشنل ہائی ویز اور پاکستان ریلوے شامل ہیں، سالانہ گرانٹ کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں خواجہ حسن ودود نے کہا کہ پاکستان ٹیبل ٹینس کی سالانہ گرانٹ بہت کم ہے اور اس گرانٹ سی قومی ٹورنامنٹس منعقدکروانے اورانٹرنیشنل ایونٹ میں کھلاڑیوں کی شرکت ناممکن ہوتی ہے اور فیڈریشن کئی انٹرنیشنل ایونٹس میں اپنی مدد آپ کے تحت کھلاڑیوں کو مقابلوں کے لئے بھیجتی ہے، انہوں نے کہا کہ قومی ٹورنامنٹس کے انعقاد کے لئے پاکستان سپورٹس بورڈ کا تعاون کرتا ہے جوکھلاڑیوں کے لئے رہائش اور کھیلنے کے لئے کورٹ فراہم کرتا ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت دیگر کھیلوں کی طرح ٹیبل ٹینس کے کھیل پر توجہ دے اور اس کی سالانہ گرانٹ میں اضافہ کرے تاکہ کھلاڑیوں کو ریگولر انٹرنیشنل مقابلوں میں بھیجا جا سکتے۔