ہائر ایجوکیشن کمیشن نے نیشنل ایکریڈی ٹیشن کونسل فا ر ٹیچر ایجوکیشن کے اشتراک سے دو روزہ نیشنل فورم آن ٹیچر ایجوکیشن کا انعقاد کیا

جمعہ مئی 15:10

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) نے نیشنل ایکریڈی ٹیشن کونسل فا ر ٹیچر ایجوکیشن (این اے سی ٹی ای )کے اشتراک سے دو روزہ نیشنل فورم آن ٹیچر ایجوکیشن کا انعقاد کیا ۔ چیئرمین این اے سی ٹی ای، ڈاکٹر ریاض الحق طارق نے اس موقع پر مہمان خصوصی کے طور پر شرکت کی جبکہ 35سے زائد سرکاری اور پرائیویٹ اساتذہ کے لیے مختص تعلیمی اداروں کے ڈینز، ڈائریکٹرز، چیئرمینز ایچ ای سی کے ملازمین اور صوبائی سطح کے اسکولوں کے نمائندگان بھی اس موقع پر موجود تھے ۔

اس فورم کا مقصد اساتذہ کی تعلیم سے متعلق مسائل کے متوقع حل کے ساتھ تعلیمی اداروں میں بہترین اساتذہ کی فراہمی اور ان کی پروفیشنل گرومننگ تھا ۔ اس فورم کے دوران یہ بات بھی زیر بحث آئی کہ اساتذہ کو صوبوں میں مختلف تعلیمی پالیسیوں کے تحت کام کرنا ہوتا ہے اور صوبوں میں اساتذہ کو ٹریننگ کروانے کے مختلف طریقہ کار اپنائے جاتے ہیں۔

(جاری ہے)

فورم کے دوران شرکاء نے اس جانب بھی توجہ مبذول کروائی کے اساتذہ کو انتہائی کم تعلیمی قابلیت اور بغیر پروفیشنل ٹریننگ کے بھرتی کر لیا جاتا ہے یہاں تک کہ اکثر اوقات اساتذہ کی بھرتی کے بارے میں پالیسی بک کو بھی خاطر میں نہیں لایا جاتا ۔

فورم کے شرکاء نے غیر ٹریننگ یافتہ اور نان پروفیشنل افراد کی بطور اساتذہ بھرتی کے حوالے سے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اس وجہ سے ٹیچر ایجوکیشن کوالٹی ایشورنس کا مسئلہ جنم لیتا ہے ۔ اس فورم کے شرکاء نے اس بات پر زور دیا کہ اساتذہ کو بھرتی سے پہلے تعلیمی قابلیت کے ساتھ ساتھ پروفیشنل ٹریننگ بھی فراہم کی جائے اور اس پر تمام صوبائی ٹیچرز ٹریننگ انسٹی ٹیوٹس میں اتفاق رائے ہونا ضرورری ہے۔ اس فورم کی اختتامی تقریب کے مہمان خصوصی کنسلٹنٹ ، ایچ ای سی، ڈاکٹر محمود الحسن بٹ تھے جب کہ چیئرمین این اے سی ٹی ای، ڈاکٹر ریاض الحق طارق، سیکرٹری این اے سی ٹی ای ، ڈاکٹر ارشاد فرخ اور ڈائریکٹر جنرل ایل آئی، ایچ ای سی، فدا حسین بھی موجود تھے ۔

متعلقہ عنوان :