میرےوالد کہتے ہیں کفن میں جیبیں نہیں ہوتیں،حمزہ شہباز

دنیا میں خالی ہاتھ آئے،خالی ہاتھ جانا ہے،اصل چیز ایمانداری ہےکرسی اوراقتدارمیں کچھ نہیں،عوام ابھی زرداری صاحب کےسوئس اکاؤنٹس کونہیں بھولے،سب کا احتساب ہونا چاہیے۔نیب میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ جمعہ مئی 15:25

میرےوالد کہتے ہیں کفن میں جیبیں نہیں ہوتیں،حمزہ شہباز
لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18مئی 2018ء) : پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء حمزہ شہبازشریف نے کہا ہے کہ میرےوالد کہتے ہیں کفن میں جیبیں نہیں ہوتیں، دنیا میں خالی ہاتھ آئے،خالی ہاتھ جانا ہے،اصل چیز ایمانداری ہےکرسی اوراقتدارمیں کچھ نہیں،عوام ابھی زرداری صاحب کےسوئس اکاؤنٹس کو نہیں بھولے، سب کا احتساب ہونا چاہیے، دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہونا چاہیے۔

انہوں نے آج نیب میں صاف پانی کمپنی کیس میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب مل کر پاکستان کو قائد اعظم کا پاکستان بنائیں۔ پاکستان نے آگے جانا ہے ہم سب کی کامیابی ہوگی بروقت الیکشن ہوں۔ حمزہ شہباز نے کہا کہ اورنج ٹرین کا افتتاح ہوگیا۔ میٹروبس بن چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میٹرو بس کو جنگلا بس کہنے والے پشاور میں اب تک میٹرو نہیں بنا سکے۔

(جاری ہے)

عوام کا پیسا ضائع کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان قرض معاف کرانے والوں کوساتھ کھڑا کرکے کس احتساب کی بات کرتے ہیں؟ اسی طرح پاکستانی عوام زرداری صاحب کےسوئس اکاؤنٹس کو نہیں بھولے۔ احتساب کا سب ہونا چاہیے دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہونا چاہیے۔ حمزہ شہباز نے کہا کہ میرے والد کہتے ہیں کفن میں جیبیں نہیں ہوتیں۔ دنیا میں خالی ہاتھ آئے ہیں خالی ہاتھ جانا ہے۔

اصل چیز ایمانداری ہے کرسی اوراقتدارمیں کچھ نہیں۔ حمزہ شہباز نے کہا کہ بےنظیربھٹو کے دور میں18 سال کی عمر میں 6 ماہ جیل میں رہا۔ انہوں نے کہا کہ مشرف دور میں نیب نے کہا کہ ہم دس سال کھنگالتے رہے لیکن کوئی کیس نہیں ملا۔ انہوں نے کہا کہ جب دامن صاف ہے تو حمزہ شہباز اور عام آدمی میں کوئی فرق نہیں۔ حمزہ نے کہا کہ رزق اللہ کی ذات دیتی ہے ہم نیب میں پیش ہوئے ہیں۔ ہم پہلے بھی سرخرو ہوئے، اب بھی ہوں گے۔