نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے پہلے یونٹ سے نیشنل گرڈ کو بجلی کی فراہمی شروع

پہلا یونٹ نیشنل گرڈ کو اپنی پوری صلاحیت کے مطابق 242اعشاریہ 25میگاواٹ بجلی مہیا کرے گا ایک ماہ کے بعد ریلائی ایلبٹی پیریڈ مکمل ہونے پر منصوبے کا یہ یونٹ اپنے کمرشل آپریشن کا آغاز کردے گا

جمعہ مئی 17:39

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) ریلائی ایبلٹی ٹیسٹ کی تکمیل اور ایڈجسٹمنٹ کے مراحل سے گزرنے کے بعد نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے پہلے یونٹ نے نیشنل گرڈ کو بجلی کی فراہمی شروع کردی ہے۔اس یونٹ کا ریلائی ایبلٹی پیریڈ ایک ماہ پرمحیط ہے اور اس دوران یہ یونٹ قومی نظام کو اپنی پوری پیداواری صلاحیت کے مطابق 242اعشاریہ 25میگاواٹ بجلی مہیا کرے گا، جس کے بعد اس یونٹ کا کمرشل آپریشن شروع ہوجائے گا۔

دو روز قبل منصوبے کے یونٹ نمبر 2کے بھی مکنیکل رًن ٹیسٹ شروع کئے جاچکے ہیںاور توقع ہے کہ اگلے ہفتے اس یونٹ کو بھی نیشنل گرڈ سے منسلک کرکے آزمائشی بنیاد پر بجلی کی پیداوار شروع ہوجائے گی۔ منصوبے کے یونٹ نمبر 4کو اپریل میں آزمائشی بنیاد پر چلایا گیا تھا اور اس یونٹ نے اپنے ٹیسٹ رًن کے دوران قومی نظام کو تقریباً 13لاکھ یونٹ بجلی مہیا کی۔

(جاری ہے)

تاہم اس یونٹ کے ٹیسٹ رًن کے دوران دو چھو ٹے پرزوں میں تکنیکی خرابی پائی گئی ۔ اس خرابی کو دور کرنے کے لئے ان دونوں چھوٹے پرزوں کو تبدیل کیا جارہا ہے اور اس مقصد کے لئے چین میں موجود مینو فیکچررکو کنٹریکٹر کی جانب سے آرڈر دیا جا چکا ہے۔توقع ہے کہ اس یونٹ سے بھی اگلے تین چار ماہ میں بجلی کی پیداوار شروع ہوجائے گی۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ ٹیسٹ رًن کے دوران قومی نظام کو مجموعی طور پر 2کروڑ 30لاکھ یونٹ بجلی فراہم کرچکا ہے۔

نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ واپڈا کے پانی اور پن بجلی کے وسائل کی ترقی کے ترجیحی پروگرام کا حصہ ہے ۔ جس کا مقصد قومی نظام میں پن بجلی کی شرح میں اضافہ کرنا ہے ۔نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے تحت نوسیری کے مقام پر 60 میٹر بلند اور 160 میٹر طویل کمپوزٹ ڈیم تعمیر کیا گیا ہے ۔ ڈیم سے 52 کلو میٹرطویل سرنگوں پر مشتمل واٹر وے سسٹم کے ذریعے دریائے نیلم کے پانی کو بجلی پیدا کرنے کے لئے چھتر کلاس کے مقام پر تعمیر کئے گئے زیر زمین پاور ہائوس تک منتقل کیا جاتا ہے ۔

پاور ہائوس میں پیدا ہونے والی بجلی کو نیشنل گرڈ میں شامل کرنے کے لئے 525کلو وولٹ صلاحیت کا سوئچ یارڈ اور ٹرانسمیشن لائن بھی تعمیر کی گئی ہے ، نیلم جہلم سے نیشنل گرڈ کو ہر سال اوسطاً 5 ارب یونٹ سستی بجلی فراہم کی جائے گی ۔ منصوبے سے سالانہ 55 ارب روپے کے فوائد حاصل ہوں گے ۔

متعلقہ عنوان :