فلسطین فائونڈیشن پاکستان کی اپیل پر ملک بھر میں یوم یکجہتی فلسطین منایا گیا

فلسطینی عوام پر امریکی سرپرستی میں جاری صیہونی مظام کے خلاف احتجاجی مظاہرے

جمعہ مئی 18:33

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) فلسطین فائونڈیشن پاکستان کی اپیل پر جمعہ کو ملک بھر میں یوم یکجہتی فلسطین منایا گیا اور فلسطینی عوام پر امریکی سرپرستی میں جاری صیہونی مظام کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے، جبکہ مرکزی احتجاجی مظاہرہ کراچی میں نیو میمن مسجد کے باہر بعد نماز جمعہ کیا گیاجس میں شہریوں کو بڑی تعداد نے شرکت کی اور امریکہ و اسرائیل کی جانب سے فلسطینی عوام پر ڈھائے جانے والے انسانیت سوز مظالم کے خلاف صدائے احتجاج بلند کی۔

احتجاجی مظاہرے میں فلسطین فائونڈیشن پاکستان کے مرکزی سرپرست رہنمائوں محفوظ یار خان، محمد حسین محنتی ، صابر ابو مریم اور دیگر نے شرکت کی اور خطاب کیا، اس موقع پر مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر القدس فلسطین کا ابدی دارلحکومت ہے، اسرائیل ایک غاصب اور جعلی ریاست ، مردہ باد امریکہ، اسرائیل نا منظور سمیت فلسطینیوں کے حق میں یکجہتی پر مبنی نعرے آویزاں تھے، شرکائے احتجاج نے امریکی ، برطانوی اور صیہونی پرچموں کو نذر آتش کر کے فلسطینیوں کے حق میں اپنے غصہ کا اظہار کیا۔

(جاری ہے)

شرکائے مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کاکہنا تھا کہ قبلہ اول بیت المقدس مسلمانوں کا ہے اور اس کی اسلامی شناخت کو امریکی سازشوں کے ذریعہ الگ تھلگ نہیں ہونے دیں گے، انہوںنے کہا کہ فلسطینیوں پر ستر سال سے غاصب صیہونی ریاست اسرائیل مظالم ڈھا رہی ہے اور امریکہ مستقل اسرائیل کی سرپرستی کر کے ان مظالم میں برابر کا شریک جرم بن چکا ہے، ان کاکہنا تھا کہ القدس فلسطین کا ابدی دارلحکومت ہے اور اس کی شناخت کو امریکی سفارتخانہ کی منتقلی کے ذریعہ تبدیل نہیں کیا جا سکتا ، انہوںنے مزید کہا کہ امریکہ نے فلسطینی مظلوموں کی لاشوں پر اپنا سفارتخانہ کھول رک ثابت کر دیا ہے کہ امریکہ کے انسانی حقوق کے تحفظ کے تمام نعرے اور دعوے کھوکھلے ہیں جبکہ امریکی اقدامات انسانی حقوق کی پائمالی اور عالمی قوانین کی خلاف ورزیوں کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔

#