ْفلسطینی بھائیوں سے مکمل یکجہتی کے اظہار کیلئے ’’یوم یکجہتی فلسطین‘‘ کے طور پر منایا گیا

فلسطینی عوام پر اسرائیل کی طرف سے ڈھائے جانے والے مظالم کی پرزور مذمت کی گئی

جمعہ مئی 18:50

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) وزیراعظم کی ہدایت پر فلسطینی بھائیوں سے مکمل یکجہتی کے اظہار کیلئے جمعہ کو ’’یوم یکجہتی فلسطین‘‘ کے طور پر منایا گیا اور فلسطینی عوام پر اسرائیل کی طرف سے ڈھائے جانے والے مظالم کی پرزور مذمت کی گئی۔ اس موقع پر بالخصوص نماز جمعہ کے اجتماعات میں جارحیت کے شکار متاثرہ فلسطینی عوام کیلئے خصوصی دعائوں کا اہتمام کیا گیا۔

سیاسی، سماجی اور مذہبی رہنمائوں سمیت مختلف شعبہ ہائے حیات سے تعلق رکھنے والے افراد نے فلسطین میں قابض اسرائیلی افواج کی بے رحمانہ اور وحشیانہ کارروائیوں کی پرزور مذمت کرتے ہوئے آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کی بھرپور حمایت کی جبکہ مختلف ٹی وی چینلز اور نشریاتی اداروں نے فلسطینیوں پر اسرائیلی مظالم اور غزہ میں قابض اسرائیلی افواج کے ہاتھوں حالیہ بے رحمانہ قتل عام کو اجاگر کیا۔

(جاری ہے)

فلسطین کے مظلوم عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی اور غزہ میں اسرائیلی ریاستی دہشت گردی کی مذمت کیلئے ملک کے مختلف مقامات پر خصوصی ریلیوں کا انعقاد کیا گیا اور اس حوالہ سے اجتماعات بھی منعقد ہوئے جن میں فلسطینی بھائیوں کی حمایت جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا گیا۔ اسرائیل کے خلاف مظاہروں میں شرکاء نے فلسطینیوں کے حق اور اسرائیل کے خلاف کتبے اُٹھا رکھے تھے۔

انہوں نے اسرائیل کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔ متحدہ مجلس عمل کے زیر اہتمام اسلام آباد میں ہونے والے مظاہرہ میں مقررین نے نہتے فلسطینیوں پر اسرائیلی فائرنگ اور گولہ باری کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری اسرائیلی فوج کے ہاتھوں فلسطینیوں کے قتل عام کا نوٹس لے۔ دریں اثنا فلسطین کی صورتحال پر غور کیلئے ترکی کے شہر استنبول میں منعقد ہونے والے اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے غیر معمولی سربراہ اجلاس میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی پاکستان کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

غزہ کی پٹی میں تشدد کے تازہ ترین واقعات پر توجہ مرکوز کرنے کیلئے غیر معمولی سربراہ اجلاس ترکی کے صدر نے او آئی سی سمٹ کے صدر نشین کی حیثیت سے طلب کیا گیا۔ غزہ کی پٹی میں قابض اسرائیلی افواج نے 60 سے زائد شہریوں کو بے رحمی سے شہید کیا اور خواتین، بچوں اور بزرگوں سمیت متعدد افراد زخمی ہوئے۔ پاکستان نے غزہ میں تشدد کی آزادانہ اور شفاف تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔