نوازشریف کے معاملے پر چیئرمین نیب کی طلبی پر کوئی دباؤ نہیں ،ْچیئر مین قائمہ کمیٹی چوہدری اشرف

نوازشریف کے بارے میں پریس ریلیزجاری کرنے پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو22 مئی کو بلایا ہے ،ْ گفتگو

جمعہ مئی 21:03

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) قومی اسمبلی کے قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف کے چیئرمین چوہدری محمد اشرف نے کہا ہے کہ نواز شریف کے معاملے پر چیئرمین نیب کی طلبی پر ہم پر کوئی دباؤ نہیں۔

(جاری ہے)

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے چوہدری محمد اشرف نے کہا کہ نوازشریف کے بارے میں پریس ریلیزجاری کرنے پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو22 مئی کو بلایا ہے، اس حوالے سے اسٹیٹ بینک کے گورنر یا نمائندے کو بھی ریکارڈ لانے کا کہا ہے، میاں صاحب پر بغیر کسی ثبوت کے الزامات لگائے گئے جس کی اسٹیٹ بینک اور ورلڈ بینک نے تردید کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ نیب قانون کی شق پانچ کے تحت ملزم وہ ہے جس کے خلاف قانونی ثبوت جمع ہوں، قانونی ثبوت قائم ہوں اس سے پہلے کوئی ملزم نہیں بنتا لہذا اس معاملے میں نیب ایکٹ کی بھی خلاف ورزی ہوئی ہے۔قائمہ کمیٹی قانون و انصاف کے چیئرمین نے کہا کہ نواز شریف کے معاملے پر چیئرمین نیب کی طلبی پر ہم پر کوئی دباؤ نہیں ہے، پارلیمنٹ نے کمیٹی کے سپرد ایک کام کیا ہے، آرٹیکل 4 اور 114 کے تحت ہرشہری کے وقار کو ریاست نے قائم رکھنا ہے، ریاست کی ذمہ داری اداروں کے ذریعے ادا کی جاتی ہے۔