میرپور متاثرین منگلا ڈیم کا ذیلی کنبہ جات کا مسئلہ ابھی تک حل نہیں ہوا‘ صرف زبانی جمع خرچ سے لوگوں کو بے وقوف بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے‘

الیکشن سے قبل میرپور کو پیرس بنانے کے خواب دکھانے والے اب مسائل سے نظریں چرا رہے ہیں سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف کی بات چیت

جمعہ مئی 21:58

میرپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف نے کہا کہ میرپور متاثرین منگلا ڈیم کا ذیلی کنبہ جات کا مسئلہ ابھی تک حل نہیں ہوا ۔ صرف زبانی جمع خرچ سے لوگوں کو بے وقوف بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ الیکشن سے قبل میرپور کو پیرس بنانے کے خواب دکھانے والے اب مسائل سے نظریں چرا رہے ۔ عوام اب ان کا احتساب کرئے گی ۔

میرپورکے لوگوں نے منگلا ڈیم کی تعمیر کے وقت اپنے اباو اجداد کی قبروں کو پانی کی نذر کیا قیمتی املاک ۔اپنا کلچر ثقافت سب کچھ ڈیم میں ڈبو دیا،،ڈیم ریزنگ کے وقت پھر اہل میرپور نے قربانی دیتے ہوئے ہجرت کی۔پوری دنیا میں ایسی کوئی مثال نہیں ملتی جو میرپور کے لوگوں نے اپنے گھر بار کی قربانی دے کر قائم کی ہے۔

(جاری ہے)

میرپور کے لوگوں کو بنیادی سہولیات سے محروم رکھنا نہ صرف زیادتی بلکہ ظلم کے زمرے میں آتا ہے۔

قربانی دینا آسان نہیں ہوتا۔ آزاد کشمیر حکومت اہل میرپور کی قربانیوں کا ادراک کرتے ہوئے ان کی حقوق کا خیال رکھے۔ ورنہ میرپور کے لوگوں کے ساتھ سڑکوں پر نکل کر شدید احتجاج کریں گئے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملنے والے مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ چودھری محمد اشرف نے کہا ہمارے اباو اجداد نے اس شہر کی آبیاری اپنے خون پسینے سے کی ہے۔ ہم کسی صورت میں بھی اہل میرپور کو تنہا نہیں چھوڑ سکتے ۔ہمارا مقصد اقتدار نہیں لوگوں کے مسائل حل کروانا ہے۔ مسلم لیگ ن کی حکومت کے سب اعلانات ہوائی ثابت ہوئے ہیں۔اب لوگ ان کی چکنی چپڑی باتوں میں آنے والے نہیں ۔مسائل حل نہ ہوئے تو پھر لوگ سڑکوں پر ہونگے۔