حکومتی رمضان بازار نامکمل ،آپریشنل نہ ہونے پر خوار بازار بن گئے ، بلال شیرازی

پونے دو ارب کے رمضان پیکیج کے باوجود یوٹیلٹی سٹور پر چینی،گھی ،آٹا دالیں نایاب، صدر مسلم لیگ یوتھ ونگ

جمعہ مئی 22:08

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) پاکستان مسلم لیگ ق کے رہنما و مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا ہے کہ حکومتی رمضان بازار نامکمل اور آپریشنل نہ ہونے پر خوار بازار بن گئے ،یوٹیلٹی سٹورز پر پونے دو ارب کے رمضان پیکیج کے باوجود یوٹیلٹی سٹورز پر چینی، گھی ، آٹا، دالیں اور دیگر اہم اشیاء نایاب ہیں جو بیڈ گورننس اور حکومتی نااہلی کے بدترین مثال ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے مسلم لیگ ہائوس میں یوتھ ونگ کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔

(جاری ہے)

سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا کہ حکومت کی طرف سے رمضان المبارک کی آمد پر ریلیف کے دعوے تو کئے جاتے ہیں لیکن عملی اقدامات نہیں ہوتے جس سے رمضان المبارک میں روزے دار روزے کی حالت میں شدید گرمی میں ریلیف کی تلاش میں دربدر ہورہے ہیں رمضان کی آمد کے ساتھ پہلے ہی روز مرغی کی قیمتوں میں6روپے اضافہ کرکے عوام کو رمضان پیکج دیا گیا ہے آنے والے دنوں میں رمضان میں مہنگائی کرکے عوام کو تکلیف دی جائے گی۔انہوںنے کہا کہ سستی شہرے کے لیے رمضان بازار ،یوٹیلٹی سٹور پرعوام کو ذلیل کیا جارہا ہے اس خطیر رقم کی اوپن مارکیٹ میں سبسڈی فراہم کی جاتی تو پورے ملک کی عوام مستفید ہوتی۔