امریکا: ٹیکساس ہیوسٹن کے ہائی سکول میں طالبعلم کی فائرنگ

پاکستانی طالبہ سبیکا عزیز شیخ سمیت 10 افراد ہلاک جبکہ درجنوں زخمی ہوگئے

Mian Nadeem میاں محمد ندیم ہفتہ مئی 11:40

امریکا: ٹیکساس ہیوسٹن کے ہائی سکول میں طالبعلم کی فائرنگ
ہیوسٹن(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔19 مئی۔2018ء) امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر ہیوسٹن کے نزدیک سانٹا فے ہائی سکول میں ایک طالبعلم کی فائرنگ سے پاکستانی طالبہ سبیکا عزیز شیخ سمیت 10 افراد ہلاک جبکہ درجنوں زخمی ہوگئے ہیں۔امریکن کونسلز فار انٹرنیشنل ایجوکیشن کی ویب سائٹ پر جاری پیغام کے مطابق کراچی سے تعلق رکھنے والی طالبہ سبیکا عزیز شیخ امریکی وزارت خارجہ کے کینیڈی لوگر یوتھ ایکسچینج پروگرام کے تحت امریکہ میں سال 18-2017 میں پڑھائی کرنے گئی تھیں۔

سکول کے 17 سالہ حملہ آور طالبعلم دیمیتریوس پاگورٹزس کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔۔پولیس کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں زیادہ تعداد طلبہ کی تھی۔ریاست ٹیکساس کے گورنر گریگ ایبٹ نے کہا کہ مختلف قسم کا دھماکہ خیز مواد سکول اور سکول کے نزدیک سے ملا ہے۔

(جاری ہے)

انھوں نے مزید کہا کہ پولیس کو حملہ آور کی ڈائری اور اس کے کمپیوٹر اور موبائل فون سے مزید معلومات ملی ہیں جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ اس نہ حملے کی پہلے تیاری کی تھی اور اس کے ارادہ تھا کہ وہ اس کے بعد خود کشی کر لے گا۔

گورنر گریگ ایبٹ نے کہا کہ ملزم نے خود کو پولیس کے حوالے کر دیا کیونکہ اس میں خودکشی کرنے کی ہمت نہیں تھی۔سکول میں موجود طلبہ نے بتایا کہ حملہ آور نے مقامی وقت کے مطابق صبح 8 بجے آرٹ کی کلاس میں داخل ہو کر فائرنگ شروع کر دی۔ ایک عینی شاہد نے بتایا کہ کوئی شخص بندوق لے کر کلاس میں داخل ہوا اور فائرنگ شروع کردی اور ایک لڑکی کو ٹانگ میں گولی لگ گئی۔

ڈکوٹا شریڈر نامی طالبہ نے بتایا کہ فائر الارم بجنے کے بعد تمام طلبہ باہر کی جانب بھاگے اور باہر جاتے ہیں گولی چلنے کی آواز آتی ہے اور میں جتنا ممکن ہوا تیزی سے بھاگی تاکہ میں چھپ سکوں اور پھر میں نے اپنی ماں کو فون کیا۔حکام کے مطابق حملے کے وقت سکول میں 1400 طلبہ تھے۔۔امریکہ میں پاکستانی سفیر اعزاز چوہدری کی جانب سے ٹوئٹر پر پیغام میں سانٹا فے سکول میں ہونے فائرنگ کے نتیجے میں سبیکا شیخ اور دیگر ہلاک ہونے والوں کی موت پر اپنے افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ شہر ہیوسٹن میں پاکستانی کونسل جنرل حکام سے مسلسل رابطے میں ہیں۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹویٹ میں کہا ہے کہ ٹیکساس کے سکول میں فائرنگ کی ابتدائی رپورٹیں اچھی نہیں ہیں۔صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وائٹ ہاﺅس میں ایک تقریب سے خطاب میں کہا کہ یہ ایک ہولناک واقعہ ہے۔میری انتظامیہ طلبہ کو محفوظ رکھنے کے لیے اور اسلحے کو ان ہاتھوں سے دور رکھنے کی ہر ممکن کوشش کرے گی جو دوسروں کے لیے خطرہ ہیں۔