ٹیکساس اسکول میں فائرنگ ، جاں بحق ہونے والی پاکستانی لڑکی سبیکا شیخ بھی شامل

سبیکا کی عمر 17 سال تھی اور وہ اپنی تین بہنوں میں سب سے بڑی تھی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین ہفتہ مئی 11:45

ٹیکساس اسکول میں فائرنگ ، جاں بحق ہونے والی پاکستانی لڑکی سبیکا شیخ ..
ٹیکساس (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 19 مئی 2018ء) : امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر سانتا فے کے ہائی اسکول میں فائرنگ کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے 10 افراد میں پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ بھی شامل تھی۔ ٹیکساس میں موجود پاکستانی قونصل خانے نے پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ کے جاں بحق ہونےکی تصدیق کی۔17 سالہ سبیکا کراچی کے علاقہ گلشن اقبال کی رہائشی تھی اور تین بہنوں سے بڑی تھی۔

سبیکا نے اپنی سیکنڈری کی تعلیم کراچی کے ایک پبلک اسکول سے حاصل کی۔ سبیکا امریکہ میں یکم اگست 2017ء سے کینیڈی لوگر یوتھ ایکسچینج اینڈ اسٹڈی پروگرام (Kennedy-Lugar Youth Exchange and Study (YES) programme) کے تحت تعلیم حاصل کر رہی تھی اور اگلے ماہ وطن واپس آنے والی تھی۔ سبیکا کے والد نے بتایا کہ اس نے 9 جون کو واپس آنا تھا۔

(جاری ہے)

اس نے 9 جون کو واپسی اسی لیے رکھی تھی تاکہ وہ ہم سب کے ساتھ عید الفطر منا سکے۔

سبیکا کے بھائی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ سبیکا سب سے پیار کرتی تھی۔ وہ گھر واپس آنے کے لیے بالکل تیار تھی، اسکول کے ایک طالبعلم جارج نے سوشل میڈیا پر سبیکا کی ایک تصویر شئیر کرتے ہوئے اسے خراج عقیدت پیش کیا اور لکھا کہ سبیکا میری بہت اچھی دوست تھی، وہ نوجوان ، خوش رہنے والی اور پُر جوش لڑکی تھی، سبیکا اپنے وطن جانے کے لیے کافی پُر جوش تھی، وہ کچھ ہی دنوں میں اپنے گھر جانے والی تھی۔

سوشل میڈیا پرکی گئی پوسٹ میں جارج نے لکھا کہ سبیکا بہت سے رضاکارانہ کام کرتی تھی ، وہ اپنی کمیونٹی کے لیےکام کرنے کے ساتھ ساتھ دیگر سرگرمیوں میں بھی حصہ لیتی تھی،اور اس نے یہاں کئی دوست بنا رکھے تھے۔ جارج نے لکھا کہ اس مرتبہ سبیکا 10 ماہ کے لیے اپنے گھر جانے والی تھی لیکن اب وہ ہمیشہ کے لیے چلی گئی ہے۔ اور اگر یہ واقعہ بھی کچھ بدل نہیں سکا تو مجھے نہیں معلوم کہ پھر بدلاؤ لانے کے لیے اور کیا کرنا پڑے گا؟ اپریل کے مہینے میں اسکول کی جانب سے کیے جانے والے ایک اعلان کے مطابق سبیکا اپنے اسکول میں اعزازی رول حاصل کرنے والے طلبا کی فہرست میں شامل تھی۔

ایک اور دوست نے سوشل میڈیا سائٹ پر سبیکا کی موت کی خبر پر دکھ اور صدمے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں سبیکا سے واشنگٹن میں ملاقات کرنے والا تھا۔یاد رہے کہ ٹیکساس کے شہر سانتا فے کے ہائی اسکول میں فائرنگ کے بعد ٹیکساس میں پاکستانی قونصل خانے کی پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ کے جاں بحق ہونےکی تصدیق کی ۔ ٹیکساس میں پاکستانی قونصل جنرل عائشہ فاروقی نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ سےمتعلق ابتدائی معلومات موصول ہوئی ہیں۔

امریکی محکمہ خارجہ نےسبیکا شیخ کے جاں بحق ہونے سے آگاہ کیا ۔ عائشہ فاروقی کے مطابق مقامی امریکی انتظامیہ نے واقعہ کی جگہ پر امدادی کارروائیوں آغاز کر دیا ہے جبکہ امریکی سفارتخانے نے سبیکا شیخ کے اہل خانہ سے بھی رابطہ کر لیا ہے۔ دوسری جانب امریکہ میں پاکستان کے سفیراعزازچودھری نےبھی سانتافے فائرنگ واقعے پر اظہار افسوس کیا ۔

اعزاز چوہدری نے اپنے بیان میں کہا کہ ہم سبیکا کےلواحقین اور دوستوں کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔ سبیکا کی موت کی خبر ملنے پر سبیکا شیخ کے والد عبد العزیز شیخ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ بیٹی کے جاں بحق ہونے کا علم میڈیا کے ذریعے ہوا۔ سبیکا خواتین کے حقوق کے لیے کچھ کرنا چاہتی تھی۔ وہ چھوٹی سی عمر میں بڑی بڑی باتیں کرتی تھی۔

سبیکا کے والد کا کہنا تھا کہ ٹی وی پر جب میں نے خبر دیکھی کہ ٹیکساس کے ایک اسکول میں فائرنگ ہوئی ہے تو میں نے سبیکا کو فون کیا لیکن اس نے میرا فون نہیں اُٹھایا۔پھر میں نے وہاں کے لوکل کوآرڈینیٹر سے رابطہ کر کے اپنی بیٹی سے متعلق پوچھا تو انہوں نے بتایا کہ ابھی اس سے بارے میں کچھ نہیں کہا جا سکتا۔ اور پھر رات 11 بجے مجھے ان کی کال آئی اور انہوں نے سبیکا کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کر دی۔

سبیکا کے والد کا مزید کہنا تھا کہ میری بیٹی بہت ذہین تھی۔وہ پاکستان کے لیے کچھ کرنا چاہتی تھی۔سبیکا کے تایا نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سبیکا نے بے شمار میڈلز حاصل کر رکھے تھے۔ سبیکا بہت ذہین اور محنتی بچی تھی ۔ سبیکا کا بھائی اپنی بہن کے جاں بحق ہونے کی خبر سننے کے بعد غم سے نڈھال ہو گیا۔سبیکا کے بھائی نے میڈیا کو بتایا کہ سبیکا نے 8 جون کو واپس آنا تھا ہم نے چھٹیوں میں بہت کچھ پلان کر رکھا تھا۔

یاد رہے کہ امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر سانتافے کے ہائی اسکول میں نامعلوم شخص نے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے ۔ امریکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق فائرنگ سے ایک پولیس افسر بھی زخمی ہوا ، جبکہ فائرنگ کرنے والے شخص سمیت دو افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔۔حملہ آور سے متعلق بتایا گیا کہ وہ مبینہ طور پر اسکول کا طالب علم ہی ہے جس نے کلاس میں گُھس کر شاٹ گن سے طلبا پر فائرنگ کردی۔