کتاف میں یمنی پرچم لہرا دیا گیا،

سرکاری فوج الملاجم کو واپس لینے کے قریب یمنی فوج البیضاء صوبے کے ضلع پر کنٹرول حاصل کرنے کے قریب ،امید ہے باغی عناصر ہتھیار ڈال دیں گے،رپورٹ

ہفتہ مئی 16:54

صنعاء (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 مئی2018ء) یمن کے صوبے صعدہ کے کتاف ضلع میں آزاد کرائی جانے والی عمارتوں پر قومی پرچم لہرا دیا گیا ہے۔ یہ پیش رفت یمنی فوج کی پیش قدمی کے بعد سامنے آئی جس میں اٴْسے عرب اتحاد کی معاونت حاصل رہی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یمنی فوج نے کتاف ضلع کے علاقے العطفین پر کنٹرول حاصل کر لیا۔ اس کے علاوہ صعدہ صوبے میں پہاڑی سلسلے اور الفرع نامی گاؤں کو بھی آزاد کرا لیا گیا۔

ساتھ ہی کتاف ضلع کے وسط سے باغی ملیشیا کے لیے آنے والی امداد اور کمک کا راستہ بھی کاٹ دیا گیا ہے۔ادھر یمنی ذرائع ابلاغ نے سرکاری فوج میں عسکری کمانڈر کے حوالے سے بتایا کہ یمنی فوج البیضاء صوبے کے ضلع پر کنٹرول حاصل کرنے کے قریب پہنچ چکی ہے۔ توقع ہے کہ وہاں موجود باغی ملیشیا کے عناصر ہتھیار ڈال دیں گے۔

(جاری ہے)

اس سے قبل یمنی فوج نے پیش قدمی کرتے ہوئے القرحاء اور البان کے پہاڑی سلسلے پر کنٹرول حاصل کر لیا تھا۔

مذکورہ کمانڈر نے باور کرایا کہ یمنی فوج کی الملاجم کی جانب پیش قدمی اور کتاف ضلع کے وسط سے آنے والی کمک کی سپلائی لائن منقطع ہونے کے سبب حوثی ملیشیا روز بروز ڈھیر ہوتی جا رہی ہے۔زمینی ذرائع کے مطابق میجر جنرل طارق صالح کے زیر قیادت ریپبلکن گارڈز بریگیڈز کے یونٹس الحدیدہ صوبے کے ضلع التحیتا میں چار تزویراتی ٹھکانوں پر حملہ کرنے میں کامیاب رہے۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ یمنی فوج التحیتا ضلع پر مکمل کنٹرول حاصل کرنے کے قریب ہے۔

متعلقہ عنوان :