الیکشن کمیشن کا انتخابی اخراجات سے متعلق سخت نگرانی کا فیصلہ

عدلیہ سے ہٹ کر بھی سرکاری محکموں کے ایماندار لوگوں کے نام دیے جاسکتے ہیں ،ْ الیکشن کمیشن نے مانیٹرنگ ٹیموں کے نام مانگ لئے

ہفتہ مئی 17:39

الیکشن کمیشن کا انتخابی اخراجات سے متعلق سخت نگرانی کا فیصلہ
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 مئی2018ء) الیکشن کمیشن نے انتخابی اخراجات سے متعلق سخت نگرانی کا فیصلہ کیا ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق الیکشن کمیشن نے ریٹرننگ افسران سے مانیٹرنگ ٹیموں کے لیے نام مانگ لیے ہیں اور کہا گیاکہ عدلیہ سے ہٹ کر بھی سرکاری محکموں کے ایماندار لوگوں کے نام دیے جاسکتے ہیں۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق ریٹرننگ افسران نے مانیٹرنگ ٹیموں کے لیے نام بھجوا دیے ہیں اور الیکشن کمیشن نے مانیٹرنگ ٹیموں کے ناموں کا جائزہ لینا شروع کردیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے انتخابی اخراجات سے متعلق سخت نگرانی کا فیصلہ کیا ہے ،ْ انتخابات میں کاغذات نامزدگی کی فیس میں بھی اضافہ کردیا گیا ہے جس کے تحت قومی اسمبلی کے امیدوار کے لیے فیس 4 ہزار سے بڑھا کر 30 ہزار اور صوبائی اسمبلی کے لیے فیس 2 ہزار سے بڑھا کر 20 ہزار کر دی گئی ہے۔۔الیکشن کمیشن کے مطابق اسمبلی کے امیدوار کے لیے اخراجات کی حد 40 لاکھ اور صوبائی اسمبلی کے امیداور کے لیے 20 لاکھ حد مقرر ہے۔