چترال پولیس نے دو ہفتے قبل شادی کی غرض سے اغواء ہونے والی جوانسال لڑکی کو بحفاظت بازیاب کرکے 4 ملزمان کو گرفتار کرلیا

ہفتہ مئی 18:25

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 مئی2018ء) چترال پولیس نے دو ہفتے قبل شادی کی غرض سے اغواء ہونے والی جوانسال لڑکی کو بحفاظت بازیاب کرکے 4 ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے۔۔پولیس کے مطابق بازیابی گزشتہ روز علاقہ جنگل کالکٹک میں عمل میں لائی گئی جہاں مغویہ لڑکی کو ایک کمرہ میں بند کرکے رکھا گیا تھا جبکہ موقع پر 4 ملزمان کو گرفتار کرکے ان کے قبضہ سے واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی برآمد کرلی گئی ہے۔

(جاری ہے)

پولیس نے بتایا کہ بازیاب ہونے والی لڑکی کی حفاظت کیلئے اسے علاقے کے ایک مشر کے گھر بھیج دیا گیا ہے جبکہ ابتدائی تفتیش کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ محمد رشید کو دروش کی رہائشی مسماة گلبہار دختر کریم اللہ پسند تھی اور اس سے شادی کرنا چاہتا تھا، اس سلسلہ میں محمد رشید نے گلبہار کے گھر رشتہ بھی بھیجا تھا تاہم اس کے والد نے رشتہ دینے سے انکار کردیا جس کے بعد محمد رشید نے اپنے ساتھیوں کی مدد سے گلبہار کو ورغلا پھسلا کر اغواء کرلیا۔

متعلقہ عنوان :