لیدر مینوفیکچرر ز اینڈ ایکسپورٹرز نے 97کروڑ ڈالر مالیت کا چمڑا برآمد کر دیا

اتوار مئی 13:30

فیصل آباد۔20 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 مئی2018ء) فیصل آباد ، سیالکوٹ اور پاکستان کے دیگر علاقوں سے تعلق رکھنے والے لیدر مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز نے توانائی کے بحران سمیت مختلف درپیش چیلنجز کے باوجود رواں مالی سال کے دوران یکم جولائی2017ء سے لے کر 20 مئی2018ء تک کے عرصہ میں تقریباً 11ماہ کے دوران 97کروڑ ڈالرسے زائد مالیت کا چمڑا برآمد کیا ہے جس میں گائے ، بھینس ، بچھڑے ، بکرے ، چھترے اور دیگر اقسام کے جانوروں و مویشیوں کا چمڑا بھی شامل ہے جو بین الاقوامی سطح پر لیدر جیکٹس ، لیدر شوز ،پرس اور چمڑے کی دیگر مصنوعات کی تیاری میں استعمال کیا جاتا ہے نیز بیرونی ممالک پاکستانی چمڑے سے مختلف لیدر پراڈکٹس تیار کر کے اس کی دنیا بھر میں فروخت کے ذریعے سالانہ اربوں ڈالر حاصل کرتے ہیں۔

(جاری ہے)

پاکستان لید ر مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے ذرائع نے بتا یا کہ گذشتہ سال یکم جولائی 2016ء سے لے کر 31مئی 2017ء تک لیدر ایکسپورٹ کی مد میں برآمدات کا حجم 68 کروڑ 50لاکھ ڈالر تھا ۔انہوںنے بتایا کہ صرف رواںماہ مئی 2018ء کے دوران 17کروڑ ڈالر مالیت کا چمڑا بیرون ملک ایکسپورٹ کیا گیا ۔انہوںنے کہا کہ حکومت لائیو سٹاک فارمرز کو تمام ممکن سہولیات فراہم کر رہی ہے تاکہ پاکستانی عوام کیلئے گوشت کی ضروریات پوری کرنے کے علاوہ اضافی گوشت اوراس کی دیگر مصنوعات سمیت چمڑے کی برآمد سے قیمتی زر مبادلہ حاصل کیا جا سکے اور ملک کو معاشی استحکام سے ہمکنار کرنے میں مدد مل سکے۔

متعلقہ عنوان :