اسلام آباد کے بڑے ہسپتال میں مریضوں کیلئے نامناسب انتظامات، شہری رل گئے

اتوار مئی 19:10

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 مئی2018ء) وفاقی دارلحکومت کے بڑے ہسپتال میں مریضوں کیلئے مناسب انتظامات نہ ہونے کے باعث شہری رل گئے۔ تفصیلات کے مطابق پمز انتظامیہ نے تین ماہ قبل یہ اعلان کیا تھا کہشعبہ بیرونی مریضاں اور دیگر شعبوں میں آنیوالے مریضوں کیلئے ایک منطم طریقہ کار کے تحت مریضوں کو چیک کرنے کیلئے سہولیات فراہم کی جائیں گی۔

پمز میں روزانہ کی بنیاد پر ہزاروں مریض علاج موالجے کی غرض سے آتے ہیں جن کیلئے ہسپتال انتظامیہ نے کوئی مناسب انتظام نہیں کیا ہوا۔ جس کی وجہ سے عوام کو گھنٹوں اپنی باری کا انتظار کرنا پڑتاہے۔ اس حوالے سے شہریوں کا کہنا تھا ہے کہ اب ہسپتالوں میں بھی سفارش کا کلچر عام ہوچکا ہے۔ ہستپتالوں میں جولوگ سفارش لے کر آتے ہیں انہیں فوری نمبر لگا کر چیک کیا جاتا ہے جبکہ عام شہریوں کا پورا پورا دن نمبر ہی نہیں آتا ۔

(جاری ہے)

پمز میں بھی انہی مریضوں کو زیادہ ترجیح دی جاتی ہے جن کی کوئی سفارش ہو ۔ عوام کے لئے ڈاکٹرز بھی دلچسپی نہیں لیتے ۔ اس حوالے سے اسلام آباد کے ایک شہری آفتاب کا کہنا تھا کہ میں اپنے بچے کی آنکھ چیک کروانے کیلئے پمز گیا لیکن سارا دن بٹھانے کے باوجود میرا نمبر نہیں آیا دوسرے دن دوبارہ گیا تو پورا دن انتظار کرنے کے بعد جب مریض کو ڈاکٹر کے پاس لے کر گیا تو ڈاکٹر نے عدم دلچسپی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک ٹیوب لکھ کردی ۔ جس کے بعد بڑا لیٹ ہسپتال سے جانا پڑا۔

متعلقہ عنوان :