نئے جوہری ہتھیار اگلے برسوں میں فوج کو ملنا شروع ہو جائیں گے، روسی صدر

نیا اوانگارڈ ہائپرسونک نظام اور سارمات نامی بین البراعظمی میزائل کسی بھی ریڈار کے ذریعے پکڑے نہیں جا سکیں گے،پوٹن

اتوار مئی 19:20

ماسکو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 مئی2018ء) روسی صدر ولادیمیر پوٹن نے کہا ہے کہ روسی فوج کو آئندہ برسوں میں نئے جوہری ہتھیاروں کی ترسیل شروع ہو جائیگی۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز ایک ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے کہاکہ نیا اوانگارڈ ہائپرسونک نظام اور سارمات نامی بین البراعظمی میزائل بھی 2020 تک فوج کے حوالے کر دیے جائیں گے۔ پوٹن نے مارچ میں ایک منصوبے کا اعلان کیا تھا، جس کے تحت روس جوہری ہتھیاروں اور میزائلوں کو جدید خطوط پر استوار کر رہا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ نئے میزائل کسی بھی ریڈار کے ذریعے پکڑے نہیں جا سکیں گے۔

متعلقہ عنوان :