ٹیکساس کے اسکول میں جاں بحق ہونے والی سبیکاشیخ کی اپنی والدہ کو آخری فون کال

"بس 19 دن رہ گئے ہیں ماما " سبیکا شیخ کی اپنی والدہ سے کی گئی آخری فون کال

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر مئی 11:18

ٹیکساس کے اسکول میں جاں بحق ہونے والی سبیکاشیخ کی اپنی والدہ کو آخری ..
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔21 مئی 2018ء) امریکی ریاست ٹیکساس کے ایک اسکول میں فائرنگ سے جاں بحق ہونے والی پاکستانی طالب علم سبیکا شیخ نے اپنی والدہ سے آخری بار کال پر بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ "بس 19 دن رہ گئے ہیں ماما"۔ تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست ٹیکساس میں روزے کی حالت میں جاں بحق ہونے والی پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ کی موت نے ہر پاکستانی کو غم سے نڈھال کر دیا ہے۔

سبیکا شیخ کے والدین کو ابھی بھی اس بات کا یقین نہیں آ رہا کہ ان کی ذہین بیٹی سبیکا شیخ اس وقت ہمارے درمیان موجود نہیں ہے۔سبیکا شیخ کی والدہ کا امریکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہنا تھا کہ اسٹوڈنٹ کمیونٹی میں اس سے پہلے ایک خود کشی کا واقعہ ہوا تھا جس نے سبیکا کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔

(جاری ہے)

لیکن میں نے کبھی بھی یہ نہیں سوچا تھا کہ میں اپنی بیٹی کو کھو دوں گی۔

سبیکا کی والدہ فرح عزیز شیخ کا مزید کہنا تھا کہ وہ بالکل انُ کے دوستوں جیسی تھی اور انہیں بتایا کرتی کہ ٹیکساس اسکول میں پڑھنے والے زیادہ تر بچے تنہائی کا شکار ہیں۔سبیکا شیخ کی والدہ کا ان کی سبیکا سے فون پر ہونے والی آخری کال سے متعلق بتاتے ہوئے کہنا تھا کہ جب میری سبیکا سے آخری بار فون پر بات ہوئی تو سبیکا کا کہنا تھا کہ "بس 19 دن رہ گئے ہیں ماما" ۔

گزشتہ برس اگست میں امریکا جانے والی سبیکا کی 9 جون کو واپسی تھی اور اس نے عیدالفطر گھر پر منانا تھی مگر روزے کی حالت میں وہ گولیوں کا نشانہ بن گئی۔۔یاد رہے کہ سبیکا عزیز شیخ امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے کینیڈی لوگریوتھ ایکسچینج اینڈ اسٹڈی اسکالر شپ پروگرام کے تحت گزشتہ برس 21 اگست کو 10 ماہ کے لیے امریکہ گئی تھی،اور 9 جون کو سبیکا شیخ کو پاکستان واپس آنا تھا۔وہ ٹیکساس کے شہر سانتافی کے ایک ہائی اسکول میں زیر تعلیم تھیں۔یہاں سبیکا اسکول کے ہی ایک طالب علم کی فائرنگ سے چل بسی۔۔فائرنگ کے نتیجے میں 9 طالب علموں اور ایک استاد سمیت 10 افراد ہلاک اور 10 زخمی ہوئے تھے۔۔فائرنگ کرنے والے طالب علم کو گرفتار کر لیا گیا تھا جو اسی اسکول کا طالب علم تھا۔