مسلم لیگ ن کے رہنما پرویز رشید کو دوبارہ وفاقی وزیر بنائے جانے کا امکان

پرویز رشید کو وفاقی وزیر سابق وزیراعظم نواز شریف کی خصوصی ہدایات پر بنایا جائے گا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین پیر مئی 11:56

مسلم لیگ ن کے رہنما پرویز رشید کو دوبارہ وفاقی وزیر بنائے جانے کا امکان
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 21 مئی 2018ء) : مسلم لیگ ن کے رہنما پرویر رشید کو دوبارہ وفاقی وزیر بنائے جانے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق کچھ ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کی خصوصی ہدایات پر وزیرا عظم شاہد خاقان عباسی نے پرویز رشید کو دوبارہ وفاقی وزیر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پرویز رشید کو حکومت کے بقایا دنوں میں سات دن کے لیے وفاقی وزیر بنایا جائے گا۔

اس فیصلے کا مقصد ڈان لیکس کے ضمن میں سزا پانے والے تمام افراد کو واپس عہدوں پر بحال رکنا ہے تاکہ اسٹیبلشمنٹ کو کرار جواب دیا جا سکے کہ ''ہم تم سے نہیں ڈرتے''۔ اس سے قبل حکومت نے سابق پرنسپل انفارمیشن آفیسر راؤ تحسین علی خان کو بھی بحال کر کے ڈی جی ریڈیو لگانے کا حکم نامہ جاری کیا تھا ، تاہم اس فیصلے پر عملدرآمد نہیں ہو سکا۔

(جاری ہے)

اب حکومت نے ڈان لیکس کے مرکزی کردار سینیٹر پرویز رشید کو واپس وفاقی وزیر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق انہیں وفاقی وزیر اطلاعات کا عہدہ ہی دیا جائے گا۔ اس حوالے سے ذرائع نے بتایا کہ وزیر مملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب سے نواز شریف اور مریم نواز نواز ناراض ہیں، دو روز قبل مریم اورنگزیب نے بطور وزیر اطلاعات سابق وزیر اعظم نواز شریف کے مبینہ ملک دشمن بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ مذکورہ انٹرویو نواز شریف کا ذاتی موقف ہے اور اس کا مسلم لیگ ن کی پالیسی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ یاد رہے کہ متنازعہ خبر کے معاملے پر اکتوبر 2016ء میں پرویز رشید کو وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات کے عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔ پرویز رشید کو ایک اعلیٰ سطحی اجلاس سے متعلق خبر لیک کرنے کا ذمہ دار ٹھہرایا گیا جس  کے بعد ان کو عہدے سے بھی ہٹا دیا گیا۔