پہلی مرتبہ نیب نے بحریہ ٹاون کیخلاف سخت ایکشن لے لیا

نیب نے سپریم کورٹ کے فیصلہ کی روشنی میں بحریہ ٹائون کراچی، بحریہ ٹائون لاہوراوربحریہ ٹائون راولپنڈی کے خلاف باقاعدہ تفتیش کا آغاز کر دیا چیئرمین نیب کے ڈائریکٹرجنرل نیب راولپنڈی کو وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اینڈ ورکس اکرم درانی کے خلاف غیر قانونی تقرریوں کا شکایت کی مکمل جانچ پڑتال، ڈائریکٹرجنرل نیب سکھر کو مبینہ طور پر آمدن سے زائد اثاثے بنانے پر مہرین بھٹو،آصف بھٹو کاشف بھٹو اور عارف بھٹو کے خلاف شکایت کی جانچ پڑتال کے احکامات

پیر مئی 15:52

پہلی مرتبہ نیب نے بحریہ ٹاون کیخلاف سخت ایکشن لے لیا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) قومی احتساب بیورو(نیب) کے چئیرمین جسٹس جاوید اقبال نے سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلہ کی روشنی میں بحریہ ٹائون کراچی،، بحریہ ٹائون لاہوراوربحریہ ٹائون راولپنڈی کے خلاف باقاعدہ تفتیش کا آغاز کر دیا ہے اور ڈائریکٹرجنرل نیب راولپنڈی کو وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اینڈ ورکس اکرم درانی کے خلاف غیر قانونی تقرریوں کا شکایت، ڈائریکٹرجنرل نیب سکھر کو مبینہ طور پر آمدن سے زائد اثاثے بنانے پر مہرین بھٹو،آصف بھٹو کاشف بھٹو اور عارف بھٹو کے خلاف شکایت کی جانچ پڑتال کے احکامات دیئے ہیں۔

چئیرمین نیب نے متعلقہ ڈائریکٹر جنرلز کو ہدایت کی ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلہ کی روشنی میںبحریہ ٹائون کے خلاف انویسٹی گیشن کو تین ماہ کے اندر قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائے اورسپریم کورٹ کے فیصلہ کی من و عن تعمیل کی جائے۔

(جاری ہے)

اس سلسلہ میں کوئی کوتاہی ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی۔ قومی احتساب بیورو(نیب) کے چئیرمین جسٹس جاوید اقبال نے وفاقی وزیر برائے ہائوسنگ اینڈ ورکس اکرم درانی کے خلاف قواعد وضوابط کو بالائے طاق رکھتے ہوئے مبینہ طور پر غیرقانونی طور پر خالی آسامیوں پر اپنے حلقہ بنوں کے لوگوں کو مبینہ طور پر غیر قانونی تقرریوں کا شکایت کا نوٹس لیتے ہوئے ڈائریکٹرجنرل نیب راولپنڈی کو مکمل جانچ پڑتال کا حکم دیا ہے۔

قومی احتساب بیورو(نیب) کے چئیرمین جسٹس جاوید اقبال نے مبینہ طور پر آمدن سے زائد اثاثے بنانے پر مہرین بھٹو،آصف بھٹو کاشف بھٹو اور عارف بھٹو کے خلاف ڈائریکٹرجنرل نیب سکھر کو شکایت کی جانچ پڑتال کا حکم دیا ہے۔