کراچی کی مقامی عدالت میں اسلامیہ کالج کی عمارت خالی کرانے سے متعلق توہین عدالت کی درخواست

عدالت نے ایس ایچ او جمشید کوارٹرز کو اسلامیہ کالجز کی عمارتوں کو خالی کرانے کے لئے 28 مئی تک مہلت دیتے ہوئے سماعت ملتوئی کردی

پیر مئی 16:02

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) کراچی کی مقامی عدالت میں اسلامیہ کالج کی عمارت خالی کرانے سے متعلق توہین عدالت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔۔عدالت نے ایس ایچ او جمشید کوارٹرز کو اسلامیہ کالجز کی عمارتوں کو خالی کرانے کے لئے 28 مئی تک مہلت دیتے ہوئے سماعت ملتوئی کردی ہے۔پیرکوسینئر سول جج شرقی کی عدالت میں اسلامیہ کالج کی عمارت خالی کرانے سے متعلق توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔

عدالت میں ایس ایچ او جمشید کوارٹرز پیش ہوئے ایس ایچ اونے بتایاکہ کالج میں ان دنوں طلبہ کے امتحانات چل رہے ہیں امتحانات کا سلسلہ 12 جون تک جارہی رہیگا۔ طلبہ کے امتحانات ختم ہونے تک خالی کرانے کیلئے مہلت دی جائے عدالت نے ایس ایچ او جمشید کوارٹرز کو اسلامیہ کالجز کی عمارتوں کو خالی کرانے کے لئی28 مئی تک مہلت دیتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ درخواست میں درخواست گزار نے کہاتھا کہ عدالتی احکامات کے باوجود اسلامیہ کالج کی عمارت خالی نہیں کی گئی اداروں کی ڈی نیشنلائزیشن کے بعد سندھ حکومت نے کرایہ ادا نہیں کیا جبکہ عدالت نے صوبائی حکومت کو اسلامیہ کالج کی عمارت خالی کرنے کا حکم دیا تھا لیکن ابھی تک عمارت خالی نہیں کروائی جا سکی درخواست میں اسلامیہ آرٹس و کامرس کالج صبح و شام سائنس کالجز کے پرنسپلز کو بھی فریق بنایا گیا تھا