رمضان بازاروں میں معیاری اور سستی اشیاے خورونوش کی فراہمی کا معاملہ

ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا انڈسٹری کو 2دن میں لاہور کے تمام رمضان بازاروں میں سٹال لگانے کی ہدایت ڈسٹری بیوٹر کی بجائے کمپنیاں براہ راست سٹالز لگائیں ،اشیائے خورونوش کم سے کم 20فی صد رعائیت پر دی جائے ڈی جی فوڈ اتھارٹی،چیئرمین رمضان بازار نور الامین مینگل اورفوڈ انڈسٹری ایسوسی ایشن کے نمائندگان کی ملاقات

پیر مئی 17:41

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) پنجاب فوڈ اتھارٹی ہیڈکوارٹر میںصوبائی وزیر برائے منصوبہ بندی و چیئرمین رمضان بازار اورڈی جی فوڈ اتھارٹی نے تمام انڈسڑی ایسوسی ایشنز کے نمائندوں سے ملاقات کی۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے فوڈ انڈسٹری نمائندوں کو 2دن میں لاہور کے تمام رمضان بازاروں میں سٹال لگانے کی ہدایت کی۔تفصیلات کے مطابق ڈی جی نورالامین مینگل کا کہنا تھا کہ رمضان بازاروں میں ڈسٹری بیوٹر زکی بجائے کمپنیاں براہ راست اپنے سٹالز لگائیں تاکہ ماہ مبارک میں عوام تک براہ راست فائدہ پہنچایا جاسکے۔

براہ راست کمپنیوں کے سٹالز لگانے سے بہتر معیار کے ساتھ ساتھ قیمتیں کم ہوں گی۔ کمپنیو ں کے سٹالز پراشیائے خورونوش پر کم سے کم 20فی صد رعائیت پر دی جائے۔

(جاری ہے)

دودھ، گھی، کوکنگ آئل، مصالحہ جات، گوشت، شربت سمیت تمام اشیاء ضروریہ کے کمپنی سٹالز لگائے جائیں گے۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے واضح کیا کہ کمپنی سٹالز پرخریداری کی حد متعین کی جائے گی تاکہ منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں سے بچا جا سکے۔

صوبائی وزیر برائے منصوبہ بندی و چیئرمین رمضان بازارملک ندیم کامران کا کہنا تھا کہ رمضان بازاروں کے حوالے سے پنجاب فوڈ اتھارٹی کا منصوبہ شاندار ہے جس کی ماضی میں کہیں مثال نہیں ملتی۔ معیار کو بہتر بنانے کے لیے ڈی جی فوڈ اتھارٹی کی سربراہی میں ٹیمیں پہلے ہی بہت متحرک ہیں ۔ کمپنیوں کے براہ راست سٹالز لگوانے سے معیار میں بہتری اور قیمتوں میں واضح کمی آئے گی۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ کمپنیوں کے سٹالز لگوانے میں ضلعی ا و رمضان بازار انتظامیہ بھر پور تعاون کرے گی۔ڈائریکٹر جنرل فوڈ اتھارٹی نورالا مین مینگل کا کہنا تھا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی کا کام معیاری اشیاء کی فراہمی ہرجگہ یقینی بنانا ہے۔فوڈ انڈسٹری کو اس حوالے سے درپیش مسائل کے حل میں بھرپور تعاون فراہم کریں گے۔

متعلقہ عنوان :