آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل کیس، احتساب عدالت نے احد چیمہ اور شاہد شفیق کو پندرہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا

پیر مئی 17:43

آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل کیس، احتساب عدالت نے احد چیمہ اور شاہد شفیق ..
لاہور۔21 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) لاہور کی احتساب عدالت نے آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل کیس میں گر فتار سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ اور نجی کمپنی کے مالک شاہد شفیق کو پندرہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا، احتساب عدالت کے جج سید نجم الحسن نے سوموار کو کیس کی سماعت کی، دوران سماعت نیب حکام کی جانب سے سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ، نجی کمپنی کے مالک شاہد شفیق کوتین روزہ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر عدالت کے روبرو پیش کیا گیا ، دوران سماعت نیب پراسکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ نجی کمپنی کے مالک شاہد شفیق سے تفتیش مکمل کرلی جس پر عدالت نے شاہد شفیق کو پندرہ روزہ جوڈیشنل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا، دوران سماعت نیب پراسیکیوشن نے عدالت کو بتایاکہ سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے کے بھی شواہد ملے ہیں جس کی تفتیش کی جارہی ہے ، نیب پراسیکوشن نے عدالت کو بتایاکہ احد چیمہ کی بیوی صائمہ احد کے نام 21 کنال 4 مرلہ زمین پیراگون میں خردیدی گئی جس کی مالیت 7 کروڑ روپے ہے۔

(جاری ہے)

نیب پروسکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ دوران تفتیش انکشاف ہوا ہے کہ ملزم احد چیمہ کیجانب سے پنجاب کالج ڈیرہ غازی خان میں 4 کروڑ کی انویسٹمنٹ کی گئی اور اسلام آباد میں فلیٹ بھی خریدے گئے جبکہ لیپ ٹاپ سے کوڈ ورڈز میں ٹرانزیکشن بھی ہوئی ، احد چیمہ کے نام کروڑوں روپے کے اثاثہ جات نکلے جبکہ مزید تفتیش کیلئے عدالت احد چیمہ کو 15روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کیا جائے ۔

احد چیمہ کے وکیل نے دلائل دیے کہ 90روز کے ریمانڈ کے باجود نیب حکام کوئی ٹھوس ثبوت پیش نہیں کرسکے جس کے باعث آمدن سے زائد اثاثہ جات کا کیس بنا کر ریمانڈ مانگا جارہا ہے جو کہ غیر قانونی ہے۔۔عدالت نے دونوں جانب سے دلائل مکمل ہونے کے بعد نیب کی جسمانی ریمانڈ کی درخواست مسترد کرتے ہوئے احد چیمہ کو پندرہ روزہ جوڈیشنل ریمانڈ پر جیل بھجوادیا۔