امریکہ کے بعد پیراگوئے نے بھی یروشلم میں اپنے سفارتخانے کاافتتاح کردیا

پیر مئی 18:38

مقبوضہ بیت المقدس (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) امریکہ کے بعد پیراگوئے کے صدرہوراسیوکارٹس نے بھی پیرکے روزیروشلم میں اپنے ملک کے اسرائیل میں سفارتخانے کاافتتاح کردیاہے ،اس طرح امریکہ اورگوئٹے مالاکے بعدیہ انتہائی متنازعہ اقدام اٹھانے والاتیسرملک بن گیاہے ۔کارٹس اوراسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہونے یروشلم آفس میں نئے سفارتخانے کے افتتاح کے موقع پرملاقات کی ہے ۔

(جاری ہے)

پراگ کے رہنمانے اسے تاریخی ایونٹ قراردیا،ان کاکہناتھاکہ یہ پراگ کی مخلصانہ دوستی اوراسرائیل کے ساتھ بھرپوراظہاریکجہتی کی عکاسی کے طورپرایک انتہائی نمایاں اقدام ہے ۔نیتن یاہوکاکہناتھاکہ دونوں ممالک کے درمیان زراعت سیکیورٹی اورٹیکنالوجی جیسے شعبوں میں تعاون مزیدبہترہوگا۔تقریباًسات ملین آبادی والے جنوبی امریکن ملک نے امریکہ کانقش قدم اپنایاہے ،جس نے کئی دھائیوں پرمحیط عالمی مفاہمت کواس وقت توڑاتھاجب دسمبرمیںیروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیاتھا۔

اس کے بعدواشنگٹن نے 14مئی کواپناسفارتخانہ تل ابیب سے یروشلم منتقل کردیا۔امریکی سفارتخانے کے کھلنے سے بڑے پیمانے پراحتجاجی مظاہرے اورغزہ سرحدپرجھڑپوں میں اسرائیلی فائرنگ سے 62فلسطینی مارے گئے ہیں۔