لاڑکانہ ،صوبائی وزیر داخلہ سہیل انور سیال کے اعزاز میں ڈی آئی جی آفس میں افطار ڈنر کا انعقاد

پیر مئی 19:10

لاڑکانہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) لاڑکانہ پولیس کی جانب سے صوبائی وزیر داخلہ سہیل انور سیال کے اعزاز میں ڈی آئی جی آفس میں افطار ڈنر کا انعقاد کیا گیا جس میں ڈی آئی جی لاڑکانہ عبداللہ شیخ، ایس ایس پی لاڑکانہ تنویر حسین، پانچوں اضلاع کے ایس ایس پیز، ڈی ایس پیز سمیت شہدا لاڑکانہ پولیس کے ورثا نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر داخلہ سہیل انور سیال نے کہا کہ ذمہ داریاں سنبھالتے وقت سندہ پولیس بڑے مسائل کا شکار تھیں، بڑی کوششوں کے نتیجے اور اللہ رب العزت کی مہربانی سے مسائل کا سامنا کیا اور بڑی حد تک کامیابیاں حاصل کیں۔

انہوں نے کہا کہ سندہ پولیس کو جدید ہتھیاروں سے لیس کرنے اور کمپیوٹرائیزڈ کرنے کہ لیے بڑے فنڈز جاری کروائے بجیٹ میں اضافہ کروایا۔

(جاری ہے)

مقابلوں کہ دوران شہید ہونے والے بہادر پولیس افسران کے معاوضے کہ لیے ایک کروڑ روپیے منظور کروایے۔ زخمی ہونے والے افسران و جوانان کے بہتر علاج کے لیے خصوصی اقدامات اٹھائے۔ انہوں نے کہا کہ الحمدللہ اب زخمی پولیس افسران و جوانان کاعلاج ملک کہ بڑی ہسپتالوں میں یقینی بنایا گیا ہے۔

پورے صوبے میں بہترین افسر تعینات کر کہ امن وامان کی صورتحال کو پہلے سے بہت بہتر بنایا۔ انہوں نے کہا کہ نئے تھانے منظور کروائے اور کافی تھانوں کی نئیں بلڈنگس بنوائی جن کا تعمیراتی کام آخری مراحل میں ہے، ادارے کو نئیں گاڑیاں دلوانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی یہ سب کامیابیاں آپ کے سامنے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندہ پولیس کے فیملی کا میمبر رہا جس سے علیحدہ ہونے پر دکھ تو ضرور ہو رہا ہے پر خوشی اس بات کی ہے کہ اداریے کے لیے کافی کچھ کر کے جارہا ہوں۔

اس موقع پر صوبائی وزیر داخلہ نے شہدا کے ورثا میں راشن تقسیم کیا جبکہ ڈی آئی جی لاڑکانہ عبداللہ شیخ اور ایس ایس پی تنویر حسین تنیو نے صوبائی وزیر داخلہ کو شیلڈ بھی پیش کی۔ بعد ازاں صوبائی وزیر کو بڑی تعداد میں اجرک اور ٹوپیاں پیش کی گئیں اور جنرل سلامی بھی دی گئی۔