رمضان المبارک میں صارفین کو ریلیف فراہم کرنے کیلئے لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں کمی گئی ہے،سپرنٹینڈنٹ انجینئر سیپکو

پیر مئی 23:43

سکھر۔ 21مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 مئی2018ء) سپرٹنڈنٹ انجینئر سیپکو سکھر اکبر درانی نے کہا ہے کہ رمضان المبارک میں صارفین کو ریلیف فراہم کرنے کیلئے لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں کمی گئی ہے، سحری ، افطار اور نماز تروایح کے دوران لوڈشیڈنگ نہیں کی جائے گی،صارفین کے ادا کردہ بلوں سے ہی ہم تنخواہ وصول کرتے ہیں، صارفین کو بجلی کی فراہمی سمیت دیگر درپیش مسائل کا خاتمہ اولین ترجیحات میں شامل ہیں، جاری کردہ اعلامیہ کیمطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھر اسمال ٹریڈرز کے صدر، سکھر ڈیویلپمنٹ الائنس کے چیئرمین حاجی محمد جاوید میمن کی قیادت میں اپنے دفتر میں سکھر اسمال ٹریڈرز اور سکھر ڈیویلپمنٹ الائنس کے رہنمائوں کے وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

وفد میں مولانا عبیداللہ بھٹو، غلام مصطفی پھلپوٹو، شکیل قریشی، بابو فاروقی، رضوان قادری، ظہیر بھٹی، محمد منیر میمن، آغا محمد اکرم، حبیب ناصر، عارف بھٹی، صداقت خان، عبدالحمید بروہی، وقاص احمد و دیگر شامل تھے، اس موقع پر ڈپٹی کمرشل منیجر اسداللہ مغل بھی موجود تھے۔

(جاری ہے)

ملاقات کے دوران حاجی محمد جاوید میمن و دیگر نے ایس ای کو سیپکو کے مسائل سے آگاہ کیا۔

اس موقع پر سپرٹنڈنٹ انجینئر اکبر درانی نے دوپہر 3سے 5 تک کے بجلی کے لوڈشیڈنگ کے دورانیہ کو کم کر صرف ایک گھنٹہ 3سے 4 بجے تک کرنے کے احکامات صادر کرتے کہا کہ ہمارا کام صارفین کو بلاجواز تنگ و پریشان کرنا نہیں، ہم عوام کو سہولیات فراہم کرنے کیلئے بیٹھے ہیں جو ہماری ذمہ داری ہے، اگر کسی بھی اہلکار نے صارفین کو بلاجواز تنگ و پریشان کیا تو اس کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی عمل میں لائی جائے گی، جن صارفین کو ڈیڈیکشن عائد کی گئی ہے، ان کی ایم این ٹی سے چیکنگ کرانے کے بعد انہیں فوری طور پر درست کر کے دیا جائے گا،اس موقع پر انہوں نے امان اللہ چوک نیوپنڈ سمیت دیگرعلاقوں میں جو ٹرانسفارمر ناکارہ ہیں کی فوری درستگی کر کے ٹرانسفارمر تنصیب کرنے کے احکامات بھی دیئے۔