منظور وٹو اور مخدوم احمد محمود پی پی پی کے ٹکٹ پر الیکشن نہیں لڑیں گے،شاہ محمود قریشی

پیپلز پارٹی اب سکڑ کر اندرون سندھ کی پارٹی بن گئی،نگران وزیر اعظم کے عہدے کے لیے ایسی شخصیت ہو جس پر کسی کو اعتراض نہ ہو، ملک میں دس دس گھنٹے لوڈ شیڈنگ ہوتی ہے، وائس چئرمین تحریک انصاف کی نجی ٹی وی کوانٹرویو

منگل مئی 00:00

منظور وٹو اور مخدوم احمد محمود پی پی پی کے ٹکٹ پر الیکشن نہیں لڑیں گے،شاہ ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے وائس چئرمین شاہ محمود قریشی نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر ترین رہنما منظور وٹو اور مخدوم احمد محمود پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر الیکشن نہیں لڑیں گے۔نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود کا کہنا تھا کہ پنجاب میں اس وقت چیئرمینپی پی پی بلاول بھٹو زرداری پھر کسی حد تک قبول ہیں لیکن آصف زرداری قابل قبول نہیں ہیں۔

پیپلز پارٹی اب سکڑ کر اندرون سندھ کی پارٹی بن گئی،نگراں وزیراعظم کے معاملے پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس عہدے کے لیے ایسی شخصیت ہو جس پر کسی کو اعتراض نہ ہو، سیاسی بصیرت ہو تو ن لیگ اور پیپلزپارٹی کو نگراں وزیراعظم کا فیصلہ خود کرنا چاہیے، نگراں وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کے اختیارات کی حد محدود کردی گئی ہے۔

(جاری ہے)

ذکا اشرف بہت اچھے آدمی ہیں لیکن وہ پیپلزپارٹی سے اتنے منسلک ہیں کہ اعتراض آجائے گا۔

تحریک انصاف کے رہنما نے کہا کہ تحریک انصاف کو اپنی کارکردگی پر اطمینان ہے، یو این ڈی پی کی رپورٹ کو توڑ مروڑ کر پیش کیا جارہا ہے، رپورٹ 2005 سے 2015 تک کی ہے جس میں ایم ایم اے اور اے این پی حکومت میں رہی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ آج بھی دس، دس گھنٹے لوڈشیڈنگ ہورہی ہے ، ن لیگ کی حکومت لائن لاسز دور کرنے میں ناکام رہی۔پروگرام کے دوران مسلم لیگ نواز کے رہنما طارق فضل چوہدری نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے کچھ لوگ اپنے پوسٹرز میں زرداری کی تصویر نہیں لگاتے ،امید ہے کہ آئین کے مطابق نگراں وزیراعظم کا فیصلہ مقررہ وقت میں مشاورت کے ساتھ ہوجائے گا،۔