مسجد میں مؤذن اور نمازی کے قتل کی لرزہ خیز واردات

منگل مئی 15:00

مسجد میں مؤذن اور نمازی کے قتل کی لرزہ خیز واردات
ْالجزائر۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء) الجزائر کی ریاست سیدی بلعباس کی ایک مسجد سے مؤذنّ سمیت 2 افراد کی لاشیں ملی ہیں جنہیںگلا کاٹ کر موت کے گھاٹ اتارا گیا۔الجزائری خبر رساں ادارے کے مطابق سکیورٹی فورسز کوگزشتہ روز مسجد خالد بن الولید میں 2 افراد کی لاشیں ملیں جن کا گلا کٹا ہوا تھا۔

(جاری ہے)

جن میں مسجد کا 64 سالہ مؤذن اور ایک 67 سالہ نمازی شامل ہے۔حکام نے کہا ہے کہ ان دونوں افراد کو فجر کی نماز سے قبل قتل کیا گیا ہے۔ واردات میں ملوث افراد کی تلاش شروع کردی گئی ہے۔واضح رہے کہ چند روز قبل الجزائر میں آئمہ مساجد کی انجمن نے ایک احتجاج شدت پسندوں کی جانب سے مسلسل حملوں کے سبب انہیں سکیورٹی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

متعلقہ عنوان :