اے این ایف نے منشیات کے جرائم میںملوث اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کے لئے جاری مہم کو مزیدتیز کرنے کی منظوری دے دی

منگل مئی 17:29

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء) اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف)کے فورس کمانڈروں نے خصوصاًتعلیمی اداروںاور ہاسٹلوں میں منشیات فراہم کرنے والے عناصراورمنشیات کے جرائم میںملوث اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کے لئے جاری مہم کو مزیدتیز کرنے کی منظوری دے دی ہے اور تعلیمی اداروں کی نگرانی کا عمل بھی سخت کرنے کا اعلان کیا ہے ان امور کا فیصلہ منگل کے روزاے این ایف ہیڈ کوارٹرمیں فورس کمانڈروں کے اجلاس میں کیا گیا ڈائریکٹر جنرل اے این ایف میجر جنرل مسرت نوازملک کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں اے این ایف کے علاقائی دفاتر کے کمانڈروں اور سینئر سٹاف افسران نے شرکت کی ڈائریکٹر جنرل اے این ایف نے اجلاس میں ادارے کے تمام شعبوں کی کارکردگی کو سراہا، اورنوجوان نسل کو منشیات فراہم کرنے میں ملوث عناصر کے خلاف جاری مہم پر توجہ مرکوز کرنے پرخصوصی زوردیا،جو ہماری نوجوان نسل کوتباہی سے دوچارکر رہے ہیںانھوں نے مصنوعی وکیمیائی طور پر تیارکردہ منشیات کے استعمال کے بڑھتے ہوئے رحجانات کو بڑا خطرہ قرار دیتے ہوئے ،خصوصی اقدامات کی ضرورت پر زور دیااجلاس کے دوران ، محکمے کے پیشہ ورانہ اموراور پیش رفت کابھی جائزہ لیاگیاانہوں نے ملک میں منشیات کی اسمگلنگ میں ملوث ملزمان ، خصوصاًتعلیمی اداروںاور ہاسٹلز میں منشیات فراہم کرنے والے عناصراورمنشیات کے جرائم میںملوث اشتہاری ملزمان کی گرفتاری اور ان کوکیفر کردارتک پہنچانے کے لئے جاری ملک گیر مہم کو مزیدتیز کرنے کے احکامات جاری کئے ڈی جی اے این ایف نے منشیات کی اسمگلنگ کی روک تھام کے لئے جاری اقدامات کی پیش رفت کا جائزہ لیااورمنشیات کی اسمگلنگ میں ملوث ذرائع ترسیل کی گرفتاری پرخصوصی زوردیااجلاس میں،نفاذ قانون ، انٹیلی جنس،تفتیش اثاثہ جات، پیروی مقدمات وقانونی چارہ جوئی، منشیات کے خلاف عوامی سطح پرشعوربیدارکرنے ،مالی و انتظامی امور اورمحکمانہ صلاحیت میں اضافے جیسے پہلوزیربحث لانے کے ساتھ مستقبل کے اہداف مقرر کئے گئے اورنئے اقدامات عمل میں لانے اورمحکمانہ استعداد بڑھانے کے منصوبوں پر خصوصی طور پرغورکیاگیا۔

متعلقہ عنوان :