چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی کا یتیم خانہ اور سبزہ زار کی اوپن مارکیٹوں کا دورہ

گراں فروشی ،کم تولنے پر10کیخلاف ایف آئی آر درج،8کو بھاری جرمانے ناقص پھل اور سبزیاں قبضے میں لیکر تلف کر ا دیں،اضافی وصول کی گئی رقم صارفین کو واپس دلانے کی مہم بھی جاری

منگل مئی 16:50

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء)چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی میاں عثمان نے یتیم خانہ اور سبزہ زار کی اوپن مارکیٹوںکا اچانک دورہ کیا ، گراں فروشی اور کم تولنے پر 10دکانداروں کیخلاف ایف آئی آر کا اندراج ،8کو بھاری جرمانے جبکہ دکانداروں کی جانب سے صارفین سے اضافی وصول کی گئی رقم بھی واپس کرا دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی میاں عثمان نے انتظامیہ کے افسران کے ہمراہ یتیم خانہ اور سبزہ بازار میں جنرل سٹورز، پھلوں، سبزیوں اور گوشت کی دکانوں کا دورہ کرکے سرکاری ریٹ لسٹ کے مطابق فروخت اور معیار کا جائزہ لیا ۔

اس موقع پر انتظامیہ کے لوگوںنے بطور صارف خود خریداری بھی کی ۔اس دوران وارننگ کے باوجود گراں فروشی سے باز نہ آنے اور کم تولنے والے 10دکانداروں کے خلاف ایف آئی آر کا اندراج کرا کے گرفتار جبکہ 8کو بھاری جرمانے کئے گئے ۔

(جاری ہے)

ریٹ لسٹ آویزاں نہ کرنے اور معمولی گراں فروشی میں ملوث 35دکانداروں کو وارننگ نوٹسز جاری کیے گئے ۔اس موقع پر7 مقامات سے ناقص پھل اورسبزیاں قبضے میں لے کر تلف کرا دی گئیں ۔

چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی نے چھاپوں کے دوران دکانداروں کی جانب سے صارفین سے اضافی وصول کی گئی رقم بھی واپس کرادی ۔ میاں عثمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اچانک دوروں کا مقصد گراں فروشوں کا ہاتھ روکنا ہے اور اس مقصد میں کامیابی کیلئے کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی جائے گی ۔ انہوںنے کہا کہ تاجر برادری سبکی کا باعث بننے والی اپنی صفوں میں موجود کالی بھیڑوںکا خود بھی محاسبہ کریں تاکہ ایسے عناصر راہ راست پر آ سکیں ۔