کوئٹہ میں ٹریفک پولیس کا شہریوں کے ساتھ ناقابل برداشت ہو گیا

شہریوں ، رکشہ ڈرائیوروں اور سوزوکی مالکان پر ٹریفک پولیس کا تشدد روز کا معمول بن گیا

منگل مئی 20:17

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء) کوئٹہ میں ٹریفک پولیس کا شہریوں کے ساتھ ناقابل برداشت ہو گیا شہریوں ، رکشہ ڈرائیوروں اور سوزوکی مالکان پر ٹریفک پولیس کا تشدد روز کا معمول بن گیا۔شہری حلقوں کے مطابق گزشتہ روز سائنس کالج چوک پر رکشہ ڈرائیور جبکہ ہاکی چوک پر سوزوکی والے کو ٹریفک پولیس اہلکاروں نے تشدد کا نشانہ بنا یا جبکہ امداد چوک اور جی پی او چوک پر بھی اس قسم کے واقعات روز کا معمول بن گئے ہیں۔

(جاری ہے)

سماجی حلقوں نے ٹریفک پولیس کے توہین آمیز رویئے کی مذمت کرتے ہوئے اعلیٰ پولیس اور ٹریفک حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ ان واقعات کا فوری نوٹس لیں کیونکہ رمضان المبارک کے دوران ٹریفک پولیس آپے سے باہر ہو چکی ہے، آئے روز مختلف چوکوں اور چوراہوں پر شہریوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے ٹریفک پولیس کے اہلکار شہریوں کے خلاف فحش کلمات اداد کرتے ہیں اور بدتمیزی پر اتر آتے ہیں شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ٹریفک پولیس کیروئے کا نوٹس لیتے ہوئے ان واقعات کی روک تھام یقینی بنائے بصورت دیگر احتجاج کا راستہ اپنایا جائے گا۔