امدادی تنظیموں کے ساتھ مل کر دو لاکھ روہنگیا پناہ گزینوں کو سیلاب سے بچانے کی کوشش کررہے ہیں، ترجمان اقوامِ متحدہ

بدھ مئی 10:50

اقوام متحدہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) ا قوامِ متحدہ کے ترجمان سٹیفن دوجیرک نے کہا کہ اقوامِ متحدہ اور دیگر امدادی تنظیمیں بنگلہ دیش کے مہاجر کیمپس میں موجود ایک ملین سے زائد روہنگیا لوگوں کو مون سون بارشوں کے زیادہ نقصاندہ اثرات سے بچانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق ترجمان نے کہا ہے کہ مہاجر کیمپس میں مقیم دو لاکھ لوگوں کے سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ سے متاثر ہونے کا امکان ہے۔

(جاری ہے)

ترجمان نے کہا کہ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق مون سو ن سیزن کے آغاز میں7 سی14 مئی تک کے صرف ایک ہفتے میں 7ہزار سے زائد لوگ طوفان اور لینڈ سلائیڈنگ سے متاثر ہوئے۔ انہوں نی کہا کہ میانمار کی رخائن ریاست کے قریب واقع بنگلہ دیش کے کاکس بازار ضلع میں عمومی طور پر سالانہ بارش2.5 میٹر تک ہوتی ہے۔اس وجہ سے مون سون سیز ن میں ڈیڑھ سے دو لاکھ پناہ گزین اور 883 کمیونٹی سہولیات سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ سے متاثر ہو سکتی ہیں جبکہ 25ہزار پناہ گزینوں کے زیادہ متاثر ہونے کا امکان ہے۔ اقوام متحدہ اور دیگر امدادی تنظیمیں ان مہاجرین کی محفوظ مقامات پر منتقلی کی کوشش کر رہی ہیں۔