ڈینش لبرل پارٹی نے وزیر کے متنازعہ بیان سے لاتعلقی کا اعلان کر دیا

بدھ مئی 10:50

کوپن ہیگن ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) ڈنمارک کی سیاسی جماعت ڈینش لبرل پارٹی نے اپنی کابینہ کی ایک رکن کے مسلمانوں کے متعلق متنازعہ بیان سے لاتعلقی اختیار کر لی ہے۔

(جاری ہے)

جرمن نشریاتی ادارے کے مطابق ڈینش پارٹی کے وزیر برائے امیگریشن و انضمام انگر اسٹوج برگ نے کہا تھا کہ مقامی مسلمانوں کو ماہ رمضان میں چھٹی لے لینی چاہیے کیونکہ مذہب ایک ذاتی معاملہ ہے۔ سٹوج برگ نے یہ بات اپنے ایک اداریے میں لکھی تھی، جوگزشتہ پیر کو شائع ہوا تھا۔ تاہم ان کی پارٹی کی اعلی قیادت نے کہا کہ پارٹی ان کے نظریات کی حمایت نہیں کرتی۔

متعلقہ عنوان :