امریکی وزیرخارجہ کے ایران مخالف بیان پر یورپ اور روس کا شدید ردعمل

بدھ مئی 13:34

برسلز ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) یورپی یونین کے شعبہ خارجہ پالیسی کی سربراہ فیڈریکا موگرینی نے ایٹمی معاہدے کے بارے میں امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیوکے بیان کے جواب میں کہا ہے کہ یورپی یونین اس معاہدے میں باقی رہے گی اور اس معاہدے کا کوئی بھی متبادل نہیں ہے۔۔یورپی یونین کے خارجہ امور کی سربراہ فیڈریکا موگرینی نے اپنے بیان میں جو یورپی یونین کی ویب سائٹ پر شائع کیا گیا ہے امریکی وزیر خارجہ کی جانب سے ایران سے متعلق ٹرمپ انتظامیہ کی حکمت عملی بیان کرنے پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئیکہا ہے کہ ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ عالمی سطح پر ایک بڑی سفارتی کامیابی ہے جس کی حفاظت ناگزیر ہے اور اس معاہدے کی بدولت ایران کی جوہری سرگرمیوں کو پٴْرامن رکھنے میں مدد مل رہی ہے۔

(جاری ہے)

فیڈریکا موگرینی نے کہا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل بالخصوص جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن اور دیگر فریقوں نے ایران کی شفاف کارکردگی کی تصدیق کی جبکہ آئی اے ای اے نے بھی اب تک گیارہ مرتبہ ایٹمی معاہدے پر ایران کے کاربند رہنے کی تصدیق کی ہے۔ ادھر روسی وزارت خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ ایران کی پالیسی کو بدلنے کے متعلق سے امریکا کو اپنی کوششوں میں ہمیشہ ناکامی کا منہ دیکھنا پڑتا ہے۔ روسی وزارت خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ امریکی حکام نے پابندیوں اور دھمکیوں کی روش اپنا کر پوری ایرانی قوم کو اپنے خلاف متحد کر لیا ہے۔