فاروق ستار کا وزیراعلیٰ سندھ کی صوبائی اسمبلی میں تقریر پر معافی مانگنے کا مطالبہ

وزیراعلیٰ سندھ خاص طبقے کیلئے حقارت اور نفرت انگیزی سے بات کرینگے تو چیئرمین پیپلز پارٹی کو اس کا نوٹس لینا چاہیے ،سربراہ ایم کیو ایم

بدھ مئی 17:23

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) قومی اسمبلی کے اجلاس میں ایم کیو ایم کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے وزیراعلیٰ سندھ کی صوبائی اسمبلی میں تقریر کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر وزیراعلیٰ سندھ ایک خاص طبقے کیلئے حقارت اور نفرت انگیزی سے بات کرینگے تو چیئرمین پیپلز پارٹی کو اس کا نوٹس لینا چاہیے وزیراعلیٰ سندھ اپنے اس بیان پر مہاجروں سے معافی مانگیں اور ہم وزیراعلیٰ سندھ نے مہاجروں کیلئے جو الفاظ استعمال کئے ہم اس سے قومی اسمبلی کے اجلاس سے ٹوکن واک آئوٹ کررہے ہیں اور ایم کیو ایم نے اجلاس سے واک آئوٹ کیا اس پر اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی نے تمام زبانیں بولنے والے لوگ موجود ہیں کراچی ہمارا ہے کسی کی جاگیر نہیں کراچی سندھ کا دارالحکومت ہے اور پاکستاان کا درالخلافہ بھی رہا ہے جب پاکستان بنا تو ہم نے مہاجروں کو خوش آمدید کہا لیکن مجھے لفظ مہاجر سے نفرت ہے کیونکہ مہاجر آتے ہیں اور واپس چلے جاتے ہیں اس ایوان میں وزیراعلیٰ کے حوالے سے جو بات کی گئی وہ اب اس ایوان میں موجود نہیں ہیں انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان اور سندھ کو توڑنے کی بات کرے گا وہ لعنتی ہوگا جنہوں نے کراچی میں اپنے لوگوں کو قتل کروایا ان کے گھر برباد کئے ایم کیو ایم اگر بات کرے گی تو بات سنے گی بھی کراچی میں بھی آیا اڑتیس ارب روپے کے منصوبے چل رہے ہیں پرویز مشرف کے ساتھ مل کر ایم کیو ایم کے لوگوں نے قتل وغارت کرتے رہے ان کو (ن) لیگ ملی یا (ق) لیگ ملی ان کے قدموں میں گرتے رہے رشیدگوڈیل کو ماں کی دعا تھی اس لئے دشمن کی گولی سے بچ گئے اور دشمن ان کا کچھ نہیں بگاڑ سکے ۔