چیئرمین حضور السلام عباسی کی سربراہی میں اسلام آباد چیمبر ذیلی کمیٹی برائے مذہبی امور کا اجلاس

بدھ مئی 17:41

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی ذیلی کمیٹی برائے مذہبی امور کا اجلاس چیئرمین حضور السلام عباسی کی سربراہی میں چیمبر میں منعقد ہوا جس میں پروموٹرز کو حج کوٹہ دینے اور 2 سال مسلسل حج کیلئے درخواست جمع کرانے والوں کا قرعہ اندازی میں نام نہ نکلنے والوں کے معاملات پر غور و خوض کیا گیا۔

کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر شیخ عامر وحید نے کہا کہ حکومت نے اس سال حج 2018ء کیلئے پرانے پروموٹرز کو ہی حج کوٹہ دیا ہے جس سے نئے پروموٹرز کو مایوسی ہوئی ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ نئے پروموٹرز کو بھی حج 2018ء کا کوٹہ دے تاکہ وہ بھی حاجیوں کی خدمت کرنے میں اپنا کردار ادا کر سکیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ جن حج درخواست دہندگان نے 2 سال مسلسل حج کیلئے درخواست دی لیکن پھر بھی ان کا نام قرعہ اندازی میں نہیں نکل سکا تو ان کو حکومت تیسرے سال بغیر قرعہ اندازی کے سرکاری سکیم کے تحت حج پر بھیجے تاکہ وہ حج کی سعادت حاصل کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ بہت سے حج درخواست دہندگان ایسے ہیں جو تین سال مسلسل سرکاری سکیم کے تحت حج پر جانے کیلئے درخواست دیتے رہے لیکن ان کے نام قرعہ اندازی میں نہیں نکل سکے جس وجہ سے وہ حج کی سعادت سے محروم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت ایک نئی حج پالیسی بنائے جس میں مسلسل دو سال قرعہ اندازی میں نام نہ نکلنے والے کو تیسرے سال لازمی طور پر سرکاری سکیم کے تحت حج پر بھیجا جائے۔اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد نوید ملک، نائب صدر نثار مرزا اور چیمبر کی ذیلی کمیٹی برائے مذہبی امورکے چیئرمین حضور السلام نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے مذہبی امور سردار محمد یوسف سے مطالبہ کیا کہ وہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کو خصوصی حج کوٹہ دیں تا کہ چیمبر کے ممبران ہر سال حج کی سعادت حاصل کر سکیں۔

انہوںنے سردار محمد یوسف کی بطور وفاقی وزیر گراں قدر خدمات کا خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ ان کو دور میں حاجیوں کے لئے انتظامات کا کافی بہتر کیا گیا جو قابل ستائش ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ آنے والے دور میں سعودی عرب میں حاجیوں کیلئے انتظامات کو مزید بہتر کیا جائے گا تا کہ حاجی سہولت کے ساتھ حج کی سعادت حاصل کر سکیں۔