پرامن اور آئینی احتجاجوں کو روکنے اور مسلسل انسانی حقوق کی خلاف ورزی ملک کی سلامتی کے لئے نقصان دہ ہوگا،چیئرمین سندھ نیشنل پارٹی

بدھ مئی 21:24

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) سندھ نیشنل پارٹی کے چیئرمین امیر بھنبھرو نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پرامن اور آئینی احتجاجوں کو روکنے اور مسلسل انسانی حقوق کی خلاف ورزی ملک کی سلامتی کے لئے نقصان دہ اور ملک کے خلاف پروپیگنڈا کرنے والوں کو فائدہ ہوگا۔ سندھ نیشنل پارٹی اسلام آباد میں انسانی اور آئینی حقوق کے لئے احتجاج کرنے والے سندھی نوجوانوں کو روکنے والے عمل کی مذمت کرتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ جس طرح ملک کے ہر شہری کو اپنے حقوق کے حاصلات کے لئے پرامن احتجاج کا آئین میں حق حاصل ہے بلکل ایسے ہی طریقے سے سندھ کے عوام کو بھی اس ملک کا شہری اور محب وطن سمجھ کر جدوجہد کا آئینی اور جمہوری حق ملنا چاہیئے۔ امیر بھنبھرو نے مزید کہا کہ کچھ دنوں سے کراچی اور اسلام آباد میں جو کچھ ہو رہا ہے جس میں پرامن جدوجہد کو روکنے کے لئے مختلف ہتھکنڈے استعمال کرکے تشدد کی طرف لے کر جانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

(جاری ہے)

ایسا عمل کسی بھی صورت میں ملک کے لئے فائدہ مند ثابت نہیں ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس طریقے سے عمران خان اور مختلف مذہبی تنظیمیں آزادی سے اسلام آباد میں سینکڑوں دنوں تک احتجاجات رکارڈ کراتی ہیں، سندھیوں کو بھی اتنا ہی حق ملنا چاہیئے کہ وہ بھی ملک کے دارالحکومت میں سندھ کی تکالیف کا مقدمہ رکھیں۔ سندھ کے پرامن عوام سے احتجاج کا حق چھیننے سے تشدد اور انتشار جنم لے گا، جس کا فائدہ ملک دشمنوں کو ہی ہوگا۔

امیر بھنبھرو نے مزید کہا کہ سندھیوں کو دیوار سے لگا کر یہ پیغام دیا جا رہا ہے کہ سندھی اس ملک کے شہری نہیں بلکہ غلام ہیں۔ خدارا ہمیں اس ملک کا شہری سمجھتے ہوئے دیگر صوبوں کی طرح ہمیں بھی اتنے حقوق دیئے جائیں۔ ملک کے آئین اور انسانی حقوق کے مطابق پرامن احتجاج کرنا ہمارا بنیادی حق ہے، اسلام آباد میں سندھی طلبہ کی طرف سے شروع کی گئی بوکھ ہڑتال کئمپ پر پولیس کی کاروائی اور طلبہ کو حراساں کرنے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں، ایسا رویہ ملکی مفاد میں نہیں ہے جس سے قومی یکجہتی کو بڑا نقصان ہوگا۔#