دانیال عزیز کی جانب سے عمران خان اور جہانگیر ترین کو چور کہنے پر پی ٹی آئی کے ارکان کی نعرے بازی

جمعرات مئی 15:14

دانیال عزیز کی جانب سے عمران خان اور جہانگیر ترین کو چور کہنے پر پی ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران وفاقی وزیر دانیال عزیز کی جانب سے عمران خان اور جہانگیر ترین کو چور کہنے پر تحریک انصاف کے ارکان نے نعرے بازی شروع کردی۔۔قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران نکتہ اعتراض پر اظہارِ خیال کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنما دانیال عزیز نے کہا کہ ایک نجی ٹی چینل کے ٹاک شو میں مجھے تحریک انصاف کے رہنما نے تھپڑ مارا، اس واقعے کی نہ ہی معافی مانگی گئی اور ناہی کوئی بیان جاری کیا گیا، بلکہ مجھے تھپڑ مار کر مجھ پر ہی الزام لگایا جارہا ہے۔

دانیال عزیز نے کہا کہ میں نے چور کا لفظ صحیح استعمال کیا، عمران خان اور جہانگیر ترین دونوں ٹیکس چور ہیں ،ْ ہم اپنا ٹیکس پورا ادا کرتے ہیں اور جو ٹیکس چور ہیں ان کو چور ہیں کہیں گے، مجھے بتایا جائے کہ جہانگیر ترین اور عمران خان نے چوری نہیں کی دانیال عزیز کے اظہار خیال کے دوران عمران خان بھی ایوان میں موجود تھے، اس موقع پر عمران خان تو خاموش رہے لیکن تحریک انصاف کے دیگر اراکین نے شدید نعرے بازی بھی کی اور عمران خان کو چور کہنے پر ہنگامہ بھی ہوا تاہم اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایازصادق نے دانیال عزیز کا مائیک بند کروادیا اور کہا کہ ہم اس وقت درست سمت کی جانب جارہے ہیں اس وقت ایوان میں ایسی کوئی بات نہیں ہونی چاہیے جس سے کسی کی دل آزاری ہو۔

(جاری ہے)

اجلاس کے دور ان خالدہ منصور کے ایمپلائز اولڈ ایج بینیفٹ انسٹی ٹیوشن کی جانب سے کارخانوں کے ملازمین کی پنشن میں اضافے سے متعلق توجہ مبذول نوٹس کے جواب میں وزیر مملکت عبدالرحمن کانجو نے کہا کہ یہ مسئلہ سپریم کورٹ میں ہے۔ ادارے کی مالی حیثیت بھی ایسی نہیں ہے کہ پنشن میں اضافہ کیا جاسکے۔ ایک سوال کے جواب میں سمندر پار پاکستانیوں کے وزیر مملکت عبدالرحمن کانجو نے کہا کہ یہ معاملہ ہر فورم پر زیر بحث آچکا ہے مگر اس کا کوئی حل نکالنے میں ناکام رہے ہیں۔

توقع ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد صورتحال واضح ہو جائے گی۔وفاقی وزیر دانیال عزیز نے کہا کہ ٹی وی پروگرام کے واقعہ پر پی ٹی آئی کو معافی مانگنی چاہیے۔ نکتہ اعتراض پر وفاقی وزیر دانیال عزیز نے کہا کہ ایک ٹی وی پروگرام میں پی ٹی آئی کے ایک رکن نے میرے ساتھ زیادتی کی۔ پی ٹی آئی کو اس واقعہ پر معافی مانگنی چاہیے تھی۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان اور جہانگیر ترین نے ٹیکس چوری کا ارتکاب کیا تھا اور اسی وجہ سے انہوں نے چور کا لفظ استعمال کیا۔