غیر قانونی اور جعلی لیز کے خلاف فیروز خیل قبیلے کے مشران و نوجوانان کامظاہرہ

جمعرات مئی 18:26

ہنگو۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) غیر قانونی اور جعلی لیز کے خلاف فیروز خیل قبیلے کے مشران و نوجوانان نے ہنگو میں احتجاجی مظاہرہ کیامقررین نے کہا کہ ہمارے قبیلے سے تعلق نہ رکھنے والے آدمی نے نے فیروز خیل قبیلے کے 8مربعہ کلومیٹر اور 8ہزار ایکٹر اراضی سے زیادہ اراضی پر غیر قانونی اور جعلی طریقے سے لیز کے زریعے قبضہ کیاہے اور جائیداد پر سابق ایم این اے برمحمد خیل قبیلے سے تعلق رکھنے والے سید جواد حسین چند افراد سادہ کاغذ پر دھوکے میں دستخط لیکر ہمارے اراضی پر قبضہ کیا 2015میں لیز کیاگیاتھا جبکہ ان تمام معاملات سے فیروز خیل قبیلے کے عوام کو مکمل طور پر لا علم رکھا گیا۔

گزشتہ دنوں اپنے علاقے میں ہم نے کوئلے کے کان پر کام شروع کیاتو سابق ایم این اے سید جواد حسین نے کام کرنے سے منع کر دیا اور یہ موقف اختیار کیا کہ ان تمام زمینوں کی لیز میرے پاس ہے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ باہر قبیلے سے آ کر چند افراد سے دھوکے پر دستخط لیکر ہمارے اراضی پر قبضہ کیاگیاہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہم گزشتہ دو ماہ سے اس غیر قانونی اور جعلی لیز کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں جبکہ کمشنر کوہاٹ ، پولیٹیکل ایجنٹ اورکزئی ایجنسی اور اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ لوئر اورکزئی ایجنسی سے بار ہاں جرگے کئے اور درخواستیں دیں مگر کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔

مظاہرین نے سابق ایم این اے سید جواد حسین کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور چیف جسٹس آف پاکستان ،ڈائریکٹر نیب ،، گورنر خیبر پختونخواہ ، چیف آف آرمی سٹاف ، ڈائریکٹر لیز اے سی ایس فاٹا،، کور کمانڈر پشاور،، آئی ایف سی پشاور،، ڈائریکٹر ایف ڈی ایم اے سے مطالبہ کیاکہ وہ ہمارے اس اراضی کو لینڈ مافیاں سے بچائے اور اس غیر قانونی اور جعلی لیز کو ختم کریں سابقہ ایم این اے سید جواد حسین کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے بصورت دیگر ہم انتہائی راست اقدام اٹھانے پر مجبورہوں گے۔