بھارت،قرض دہندگان کو کریک ڈائون کاخوف،83ہزار کروڑ روپے ادا،2100کمپنیوں نے واجبات ادا کئیے

جمعرات مئی 19:36

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) بھارت میں قرض دہندگان نے کریک ڈائون کے خوف سے 83ہزار کروڑ روپے ادا کر دئیے،2100کمپنیوں نے اپنے ذمہ واجب الادا واجبات ادا کئیے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارت میں بینکوں سے حاصل شدہ قرض جان بوجھ کر ادانہ کرنے والی کمپنیوں کے سربراہوں نے کمپنیوں میں تالے لگنے کے ڈر سے 83 ہزارکروڑ روپے کے واجبات ادا کردیئے۔

(جاری ہے)

کمپنی امور کی وزارت کی جانب سے جاری اعدادو شمار کے مطابق 2100سے زائد کمپنیوں نے بینکوں کے قرضے واپس کردیئے۔ ان میں سے زیادہ تر آئی بی سی میں ترامیم کے بعد بینکوں کے بقایا جات واپس کئے۔حکومت نے انسالوینسی اینڈ بینک رپٹسی کوڈ( آئی بی سی) میں ترمیم کرکے ان تمام کمپنیوں کے سربراہوں کو نیشنل کمپنی لا ٹربیونل( این سی ایل ٹی )کی طرف سے کارروائی کے بعد نیلام ہونیوالی کمپنی کیلئے بولی لگانے پر پابندی لگا دی ۔ واضح ہو کہ جب قرض کی قسطیں 90دنوں تک نہ ادا کی جائیں تو اسے نان پرفارمنگ ایسٹس قراردیدیا جاتا ہے۔

متعلقہ عنوان :