مہاجرین کو دو ماہ سے گزارہ نالائونس نہیں ملا مہاجرین کے گھروں میں فاقوں کی نوبت آگئی ہے

مہاجرکیمپ ہڈا باڑی کے صدر چوہدری عبدواحد کی بات چیت

جمعرات مئی 20:37

باغ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) مہاجرکیمپ ہڈا باڑی کے صدر چوہدری عبدواحد نے کہا ہے کہ مہاجرین کو دو ماہ سے گزارہ نالائونس نہیں ملا مہاجرین کے گھروں میں فاکوں کی نوبت آگئی ہے رمضان المبارک میں جہاں دیگر لوگ اپنے بچوں کو ہر قسم کے پھل فروٹ لیکر گھر جاتے ہیں جبکہ مہاجرین واحد لوگ ہیں جو فروٹ تو دور کی بات ہے وہ بچوں کے لیے کھانے پینے کی اشیاء تک نہیں لے جا سکتے ہیں اگر وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے 24گھنٹے کے اندر مہاجرین کو اب تین ماہ کا اگٹھا گزارہ الائونس نہ دیا تو ہم وزیر اعظم ہائوس کے سامنے تادم مرگ بھوک ہڑتال کریں گے جس کی تمام تر زمہ داری موجودہ حکومت آزاد کشمیر پر عائد ہوگی ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ مہاجرین کو گزارہ الائونس نہ ملنے کی وجہ سے مہاجرین نے ابھی تک بچوں کے لیے کوئی کپڑے جوتے تک نہیں لیے اگر ایسا ہی ہوا تو ہم عید بھی بھوک ہڑتال کی صورت میں منائیں گیانہوں نے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری طور مہاجرین جموں وکشمیر کو گزارہ الائونس کی ادائیگی کو یقینی بنایا جائے تاکہ مہاجرین کے بچے بھی عید اور رمضان کی خوشیوں میں شریک ہو سکیں۔

متعلقہ عنوان :