چراغٖ تلے اندھیرا،وزیر اعظم ہاؤس کے عقب میں واقع دومیل تا مانکپیاںلنک روڈ تاحال تعمیر نہ ہوسکی

زلزلہ 2005میں تباہ ہونے والی لنک روڈکی تعمیر کے لیے تین حکومتوں نے فنڈز کا وعدہ کیا مگر عملدرآمد نہ ہو سکا

جمعرات مئی 20:39

مظفرآباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) چراغٖ تلے اندھیرا،وزیر اعظم ہاؤس کے عقب میں واقع دومیل تا مانکپیاںلنک روڈ تاحال تعمیر نہ ہوسکی،،زلزلہ 2005میں تباہ ہونے والی لنک روڈکی تعمیر کے لیے تین حکومتوں نے فنڈز کا وعدہ کیا مگر عملدرآمد نہ ہو سکا‘وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان ،وزیر تعلیم بیرسٹر افتخار علی گیلانی فوری طور پر سٹرک کی تعمیرات شروع کروائیں بصورت دیگر علمدار چوک بند کر کے احتجاج کریں گے ۔

ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز سنٹرل پریس کلب میں انواالحق چوہدری،ساجد شاہ،ندیم عباسی،یونس شاہ،شہزاد شاہ،سعید شاہ،جعفر شاہ،ایاز اعوان،ندیم احمد نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔

(جاری ہے)

ان کا مزید کہناتھا کہ زلزلہ میں تباہ ہونے والی دومیل تا مانکپیاں کیمپ لنک روڈ آج تک دوبارہ تعمیر نہ ہوسکی اس لنک روڈ کے ساتھ بڑی آبادی منسلک ہے زلزلہ میںسٹرک تباہ ہوئی لیکن کسی نے توجہ نہ دی ،،پیپلز پارٹی کی حکومت نے سٹرک کو تعمیر کرنے کا وعدہ کیا مگر وفا نہ ہو سکا ،آزاد کشمیر میں قائم مسلم لیگ ن کی حکومت سے عوام کو بڑی امیدیں وابسطہ تھی مگر انہوں نے عوام کو کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ،حلقہ تین کے ایم ایل ایے وزیر تعلیم بیرسٹر افتخار علی گیلانی الیکشن مہم کے دوران ہر روز دومیل کا چکر لگاتے تھے مگر وزیر بننے کے بعد صاحب زوق نے اس طر ف جانے کی جسارت نہ کی عوام علاقہ نے کہا کہ اگر ایک ہفتے کے اندر روڈ کا سنگ بنیاد رکھ کر کام نہ شروع کیا گیا تو ہم عملدار چوک میں احتجاجی مظاہرہ کرینگے عوام علاقہ نے کہا کہ وزیر ہاؤس کے چند میٹر فاصلے پر موجود یہ سٹرک کی تعمیر نہ کروانہ لمحہ فکریہ ہے ،دومیل کے مقام پر سٹرک کی دیوار گرنے کی وجہ سے عوام علاقہ کے کرڑوں روپیوں سے تعمیر ہونے والے مکانات کو بھی خطرات لائق ہو گئے ہیں اگر وہاں کی دیوار کی تعمیر نہ ہوئی تو کسی بھی وقت عوام کا بڑا مالی و جانی نقصان ہو سکتا ہے وزیرتعلیم دومیل کا دورہ کر کے سٹرک کی صورت حال کا جائزہ لیں اور ہمارے حال پر رحم کھاتے ہوئے سٹرک کی تعمیر کے لیے احکامات جاری کریں۔