پنجاب میں 3سال میں 302خطرناک دہشتگرد ہلاک، 513گرفتار ہوئے، رپورٹ وزارتِ داخلہ کو ارسال

دہشت گردی پھیلانے میں ہمسایہ ملک کی دہشت گرد انٹیلی جنس ایجنسی را سمیت دیگر دشمن ملک ایجنسیاں ملوث رہیں‘رپورٹ

جمعرات مئی 20:57

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) پنجاب حکومت نے دہشت گردی کے خاتمے کے لئے کئے جانیوالے اقدامات کی 3سالہ رپورٹ مرتب کر کے وزارت داخلہ کو ارسال کر دی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں 4726انٹیلی جنس آپریشن میں 302خطرناک دہشت گرد مارے گئے، 513دہشت گرد گرفتار ہوئے۔ دہشت گردی پھیلانے میں ہمسایہ ملک کی دہشت گرد انٹیلی جنس ایجنسی را سمیت دیگر دشمن ملک ایجنسیاں ملوث رہیں۔

(جاری ہے)

رپورٹ کے مطابق دہشت گردوں کے خلاف گھیرا تنگ کیا گیا، پاک فوج،، پاک رینجرز سمیت تمام قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی مشترکہ کارروائیوں میں تین سال کے دوران 4726انٹیلی جنس بیسڈ آپریشنز میں 302خطرناک دہشت گرد ہلاک ہوئے، 513خطرناک دہشت گرد گرفتار، 341کو سزائیں سنائی گئیں۔تین سال کے آپریشن میں دہشت گردی کا 80فیصد تک خاتمہ کیا گیا،کالعدم تنظیموں کے دہشت گرد ہلاک ہو ئے، گرفتار دہشت گردوں سے 456کلوگرام باررودی مواد، 349گرنیڈز، 28 خودکش جیکٹس،31 راکٹ برآمد کئے گئے۔

رپورٹ کے مطابق پنجاب میں دہشت گردی کو سپورٹ کرنے پر 103کیس درج کئے گئے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ دہشت گردی پھیلانے میں ہمسایہ ممالک کی را سمیت دیگر ملک دشمن ایجنسیاں ملوث رہیں اور بدامنی پھیلانے کے لئے اقدامات کرتی رہیں۔