سی پی او کا اردل روم کاانعقاد ۔30پولیس افسران پیش

جمعرات مئی 21:20

ملتان۔24 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) سٹی پولیس آفیسر سرفراز احمد فلکی نے اپنے دفتر میں اردل روم کا انعقاد کیاجس میں 30پولیس افسران پیش ہوئے۔۔پولیس ترجمان کے مطابق اس موقع پر دوافسران کی مختلف نوعیت کی اپیلیں منظور کرتے ہوئے ان کی سزائیں ختم کردی گئیں۔سابق کانسٹیبل مبین یوسف کی برخاستگی کی سزا ختم کرکے اسے دوبارہ عہدے پر بحال کردیاگیا۔

انسپکٹر طارق پرویز کی سنشور کی سزا ختم کردی گئی۔انسپکٹر منظور احمد کی تنزلی کرتے ہوئے سب انسپکٹر بنادیاگیا۔انسپکٹر محمد اشرف کی ایک سال کی سروس ضبط کرلی گئی، چارانسپکٹرز محمد ظفر،محمد انور،عمردراز اور قمرعباس کو ایک سال ودہولڈنگ آف پروموشن کی سزا سنائی گئی۔چارانسپکٹرز کو مختلف شکایات پر وارننگ جاری کردی گئی۔

(جاری ہے)

سب انسپکٹر علی حسن اور محمد افضل کو ایک سال سروس ضبگی کی سزا دی گئی۔

7سب انسپکٹرز محمد الیاس،آصف شہزاد،محمد شمعون،ضیاء اختر،عاصم محمود،محمد جاوید اور علی حسن کو ایک سال ودہولڈنگ آف پروموشن کی سزا دی گئی۔سب انسپکٹر محمد صدیق،محمد شمعون،محمد جاوید اور ٹریفک وارڈن عثمان بیگ کو پہلے سے جاری کردہ شوکاز نوٹس داخل دفتر کرادیئے گئے۔ہیڈ کانسٹیبل محمد سلیم کو دوسال سروس ضبگی کی سزا سنائی گئی ۔بعدازاں سی پی او نے اردل روم میں موجود ملازمین و افسران کوہدایت کی کہ وہ اپنے فرائض احسن طریقے سے سرانجام دیں ۔انہوں نے مزید کہاکہ اس سلسلے میں کسی قسم کی کوتاہی یا غفلت برداشت نہیں کی جائیگی۔

متعلقہ عنوان :