اداروں کے درمیان ٹکراؤ ملکی مفاد میں نہیں ہے، ممتاز حسین سہتو ایڈووکیٹ

جماعت اسلامی ملک میں آئین و قانون کی حکمرانی اورکرپٹ لوگوں کا بلا تفریق احتساب چاہتی ہے،جنرل سیکرٹری جماعت اسلامی سندھ

جمعرات مئی 19:10

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری ممتاز حسین سہتو ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ اداروں کے درمیان ٹکراؤ ملکی مفاد میں نہیں ہے۔ جماعت اسلامی ملک میں آئین و قانون کی حکمرانی اورکرپٹ لوگوں کا بلا تفریق احتساب چاہتی ہے۔ تاہم سابق نا اہل وزیر اعظم کی جانب سے اپنی بے گناہی ثابت کرنے کی بجائے مجھے کیوں نکالا کی رٹ کے ساتھ اداروں پر بلا جواز تنقید افسوس ناک اور چور کی داڑھی میں تنکے کے مترادف ہے۔

انہوں نے آج ایک بیان میں کہا کہ موصوف جب وزیر اعظم کی کرسی پر تھے تو سب کچھ ٹھیک تھا اور جیسے ہی ان کو کرپشن کے الزام میں نکالا گیا تو کمنٹری شروع کردی ۔ بہادری کا تقاضہ تھا کہ جب ان سے دباؤکے ذریعے استعفیٰ یا دیگر مطالبات کئے جارہے تھے تو وہ اس وقت کیوں خاموش رہے۔

(جاری ہے)

صوبائی رہنماء نے کہا کہ تمام اداروں کو نہ صرف اپنے دائرہ کار میں رہ کر کام کرنا چاہیے بلکہ سابق وزیر اعظم کے الزامات کا جائزہ بھی ضرور لینا چاہیے۔

نا اہل قرار دیے جانے اور اپنے آپ کو صادق و امین ثابت نہ کر سکنے کے بعد لگتا ہے کہ میاں محمد نواز شریف اداروں کو بلیک میل کر کے کوئی نیا این آر او لینا چاہتے ہیں جس کی قوم ہرگز اجازت نہیں دے سکتی حالانکہ بات صرف اتنی مختصر ہے کہ وہ اپنے جائزذرائع بتا کر اپنی جان چھڑا سکتے ہیں۔ #